உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کرناٹک اسمبلی انتخابات : بیدر میں انتخابی مہم عروج پر، الزام تراشیوں اور دعووں کا دور جاری

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کیلئے سیاسی سرگرمیاں اور تشہیری مہم عروج پر ہیں ۔ ضلع بیدر میں بی جے پی کانگریس جنتادل سیکولر کے امیدواروں میں سخت مقابلے کی امید ہے اور اُمیدوار ایک دوسرے پہ جم کر الزامات بھی عائد کر رہے ہیں۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کیلئے سیاسی سرگرمیاں اور تشہیری مہم عروج پر ہیں ۔ ضلع بیدر میں بی جے پی کانگریس جنتادل سیکولر کے امیدواروں میں سخت مقابلے کی امید ہے اور اُمیدوار ایک دوسرے پہ جم کر الزامات بھی عائد کر رہے ہیں۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کیلئے سیاسی سرگرمیاں اور تشہیری مہم عروج پر ہیں ۔ ضلع بیدر میں بی جے پی کانگریس جنتادل سیکولر کے امیدواروں میں سخت مقابلے کی امید ہے اور اُمیدوار ایک دوسرے پہ جم کر الزامات بھی عائد کر رہے ہیں۔

    • Share this:
      بیدر : کرناٹک اسمبلی انتخابات کیلئے سیاسی سرگرمیاں اور تشہیری مہم عروج پر ہیں ۔ ضلع بیدر میں بی جے پی کانگریس جنتادل سیکولر کے امیدواروں میں سخت مقابلے کی امید ہے اور اُمیدوار ایک دوسرے پہ جم کر الزامات بھی عائد کر رہے ہیں۔ ہمناآباد اسمبلی حلقہ کے بی جے پی امیدوار سبھاش کلور نے ہمناآباد اسمبلی حلقہ کے کانگریس امیدوار راج شیکھر پاٹل الزام عائد کیا کہ یہ نام کہ سیکولر ہیں اور مسلمانوں کو ہراساں کرتے ہیں ۔
      کلور نے دعوی کرتے ہوئے کہا کہ میں حقیقی سیکولر ہوں ۔ ہمناآباد کا ایک بھی مسلمان کہتا ہے کہ میں کمیو نل ہوں تو میں سیاست چھوڑنے تیار ہوں۔ادھر بیدر ساوتھ اسمبلی حلقہ کےبی جے پی امیدوار ڈاکٹر شیلندر بیلداڑے نے کہا ساوتھ کے کانگریسی رکن اسمبلی و امیدوار اشوک کہینی نے یہاں کے کسانوں اور غریبوبوں کو دھوکا دے کر جھوٹ بول کر کامیابی حاصل کی تھی ۔ بیلداڑے نے کہا آپ لوگوں نے کانگریس جےڈی ایس کے دونوں امیدواروں کو بھی موقع دے کر دیکھا ہے ۔ اب ایک موقع مجھے بھی دیجئے۔
      قابل ذکر ہے کہ کرناٹک میں 224 رکنی اسمبلی کیلئے 12 مئی کوووٹ ڈالے جائیں گے اور 15 مئی کو نتائج کا اعلان کیا جائے گا۔
      First published: