உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جنہیں جیل میں ہونا چاہئے تھا، کانگریس نے انہیں اقتدار میں بٹھا رکھا ہے: نریندر مودی

     کرناٹک اسمبلی انتخابات میں مصروف وزیراعظم نریندر مودی نے سدارمیا حکومت پر بدعنوانی میں ڈوبے ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ سوٹ کیس میں کلین چٹ لے کر گھومتے ہیں۔ دہلی سے لے کر یہاں تک فیملی کے علاوہ کسی کی نہیں سنتے۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات میں مصروف وزیراعظم نریندر مودی نے سدارمیا حکومت پر بدعنوانی میں ڈوبے ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ سوٹ کیس میں کلین چٹ لے کر گھومتے ہیں۔ دہلی سے لے کر یہاں تک فیملی کے علاوہ کسی کی نہیں سنتے۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات میں مصروف وزیراعظم نریندر مودی نے سدارمیا حکومت پر بدعنوانی میں ڈوبے ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ سوٹ کیس میں کلین چٹ لے کر گھومتے ہیں۔ دہلی سے لے کر یہاں تک فیملی کے علاوہ کسی کی نہیں سنتے۔

    • Share this:
      میسور: کرناٹک اسمبلی انتخابات میں مصروف وزیراعظم نریندر مودی نے سدارمیا حکومت پر بدعنوانی میں ڈوبے ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ سوٹ کیس میں کلین چٹ لے کر گھومتے ہیں۔ دہلی سے لے کر یہاں تک فیملی کے علاوہ کسی کی نہیں سنتے۔

      اس سے قبل کرناٹک کے بیجاپور میں انتخابی جلسے کو خطاب کرتے ہوئے یوپی اےچیئرپرسن سونیا گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی پر زبردست تنقید کی۔ وہیں راہل گاندھی نے آج 2019 میں وزیراعظم کے لئے دعویداری پیش کی۔

      دوسری طرف وزیراعظم  نریندر مودی نے انتخابی جلسوں میں کانگریس پر حملہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس ذات پات اور مذہب کی بنیاد پر پھوٹ ڈالو اور راج کرو کی پالیسی پر یقین رکھتی ہے اور بھائی بھائی کو لڑواتی ہے، لیکن بسویشور کی اس زمین کے لوگ ایسا ہونے نہیں دیں گے۔

      وزیراعظم نے کہاکہ کانگریس حکومت نے بنگلور کو انٹرنیشنل لیول پر بدنام کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ ریاست میں خواتین، سیاسی کارکنان کوئی بھی محفوظ نہیں ہے۔ مودی نے کہاکہ جنہیں جیل میں ہونا چاہئے، کانگریس نے سرکار میں بٹھا رکھا ہے۔

      مودی نے کہاکہ بس ووٹ کی خاطر فرقہ واریت کی بنیاد پر ووٹ پانے کے لئے اس شہر کو ایسی تکڑی کے حوالے کردیا گیا ہے۔ ایک پولیس افسر کی مشکوک حالت میں موت میں کس کانام آیا، لوگوں کے زبان پر کس کانام ہے؟

      انہوں نے کرناٹک کے بنگلور میں دن کی آخری انتخابی ریلی کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے سمجھ نہیں آتا کہ کرناٹک کے وزیراعلیٰ کو بنگلور کے ساتھ کیا ناراضگی ہے، کیا غصہ ہے۔ انہوں نے بنگلور سے منہ ہی موڑ لیا ہے اور پورا شہرانفیمس ٹرایو کے حوالےکردیا ہے۔

      کرناٹک الیکشن میں بی جے پی ممبرپارلیمنٹ اسمرتی ایرانی نے کہا کہ مودی جی اور امت شاہ کو ملک کے باشندوں کے مستقبل کی فکر رہتی ہے جبکہ راہل گاندھی بس اپنے ہی بارے میں سوچتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اگر 2019 میں ان کی پارٹی اقتدار میں آتی ہے، تو وہ وزیراعظم بنیں گے۔ ایک شخص جسے خود کی قیادت اور صلاحیت پر یقین نہیں، وہ لوگوں سے اس پر یقین کرنے کی کیسی امید کرسکتا ہے۔

      دوسوچوبیس اسمبلی انتخابات میں کرناٹک میں اس ہفتہ (12 مئی) کو ووٹ ڈالے جانے ہیں۔ نتائج کا اعلان 15 مئی کو ہوگا۔ ریاست میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان سیدھا مقابلہ ہے جبکہ جے ڈی ایس کو تیسرا کھلاڑی سمجھا جارہا ہے۔

       

       
      First published: