உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یدی یورپا کے بچاو میں آئے وزیراعظم، "جن کے صدر خود ضمانت پر ہیں، وہ ہم سے سوال کرتے ہیں": نریندر مودی

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخ قریب آتے ہی انتکابی مہم بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔ ریاست میں اتوار کو بی جے پی اسٹار پرچارک اور وزیراعظم نریندر مودی سمیت تمام عظیم رہنماوں کی کل 12 ریلیاں کیں، جہاں کانگریس پر جم کر حملہ کیا۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخ قریب آتے ہی انتکابی مہم بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔ ریاست میں اتوار کو بی جے پی اسٹار پرچارک اور وزیراعظم نریندر مودی سمیت تمام عظیم رہنماوں کی کل 12 ریلیاں کیں، جہاں کانگریس پر جم کر حملہ کیا۔

    کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخ قریب آتے ہی انتکابی مہم بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔ ریاست میں اتوار کو بی جے پی اسٹار پرچارک اور وزیراعظم نریندر مودی سمیت تمام عظیم رہنماوں کی کل 12 ریلیاں کیں، جہاں کانگریس پر جم کر حملہ کیا۔

    • Share this:
      میسور: کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخ قریب آتے ہی انتکابی مہم بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔ ریاست میں اتوار کو بی جے پی اسٹار پرچارک اور وزیراعظم نریندر مودی سمیت تمام عظیم رہنماوں کی کل 12 ریلیاں کیں، جہاں کانگریس پر جم کر حملہ کیا۔

      وزیراعظم مودی کے علاوہ بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے بھی ریلیاں اور روڈ شو کیا۔ وہیں کرناٹک کے موجودہ وزیراعلیٰ سدارمیا نے بھی میسور میں، بی ایس یدی یورپا نے وجے پورا اور بلاری میں، ایچ ڈی کمار سوامی نے حسن اور چکمگلور میں ریلیاں کیں۔ وہیں وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے بنگلور میں روڈ شو کیا۔

      ہبلی میں عوامی جلسے کو خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کانگریس صدر راہل گاندھی اور ان کی ماں سونیا گاندھی پر سیدھا حملہ کیا۔ یہاں انہوں نے کہاکہ یدی یورپا نے عدالت کا سامنا کیا،لیکن پھر بھی کانگریس ان کے خلاف بے بنیاد الزامات لگارہی ہے۔ کانگریس کے لیڈروں کو جواب دیناچاہئے کہ مان اور ان کا بیٹا ضمانت پر ہیں، ان کے کلاف 5000 کروڑ کے گھوٹالے کا کیس چل رہا ہے، جس پارٹی کے صدر ضمانت پر ہیں، وہ ہم سے سوال پوچھ رہے ہیں۔

      نریندر مودی نے اس کے ساتھ ہی کہا کہ کانگریس نے کرناٹک کے حال اور مستقبل دونوں کی کبھی فکر نہیں کی۔ انہوں نے سب سے زیادہ اپنے اقتدار میں رہنے کی فکر کی۔ ہم ایک نیا بھارت بنانا چاہتے ہیں، جہاں بچوں کو نوجوانوں کو نوکری ملے اور جہاں ذات پات کا بھید بھاو نہ ہو۔

      وہیں مرکز میں اپنی سرکار کی حصولیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہم دور دراز کے مقامات کو ہوائی سہولیات سے جوڑرہے ہیں، ہم ایوی ایشن سیکٹر کی توسیع کررہے ہیں۔ ہم عام لوگوں کو ہوائی سفر کروانا چاہتے ہیں۔

      اس سے قبل چتردرگ اور رائے چور کی ریلی کے بعدجامکھنڈی میں وزیراعظم نےکہا کہ مجھے نہیں لگتا کہ آج کی ریلی کے بعد آپ کے وزیراعلی کو نیند آئے گی، آپ لوگوں نے آج وزیراعلیٰ کی نیند حرام کردی ہے۔

      انہوں نے کہاکہ ہم کرناٹک کو کانگریس کے ذریعہ منقسم نہیں کرنے دیں گے، یہاں ذات پات کا زہر نہیں کھلنے دیں گے۔ انہوں نے کرناٹک کے لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ کانگریس کی تقسیم کرنے والی سیاست کا شکار نہ ہوں۔

       

       

      چتردرگ کے بعد وزیراعظم نے رائے چور میں دوسری ریلی کی۔ اس دوران نریندر مودی نے کہاکہ ایسے کئی لوگ ہیں جو اے سی روم میں بیٹھ کر کرناٹک میں سہ رخی اسمبلی ہونے کی بات کررہے ہیں، میں انہیں کہنا چاہتا ہوں کہ آپ رائے چور آئیے اور رائے دہندگان کا موڈ دیکھئے۔

      انہوں نے کہاکہ رائے چور تعلیم، تہذیب اورثقافت کی سرزمین ہے۔ کانگریس نے اس سے کچھ نہیں سیکھا۔ جب یہاں کی عوام الگ کرناٹک کے لئے جدوجہد کررہی تھی، تب جن سنگھ پارٹی آپ کے ساتھ کھڑی تھی۔ کانگریس کو اگر رائے چور کی تہذیب وثقافت کے بارے میں معلوم ہوتا تو کرناٹک کا تقسیم نہیں ہوتا۔

      اس سے قبل چتردرگ ریلی میں مودی نے کہا کہ اسرو کی چتردرگ یونٹ میں ہی چندریان 2 کی تیاری ہورہی ہے۔ یہ چتردرگ کی وہ سرزمین ہے، جہاں"جے جوان، جے کسان" کی جیتی جاگتی مثال سے تجربہ ہوتا ہے۔ مودی نے کہاکہ ووٹ بینک کے لئے کانگریس پارٹی سلطانوں کی جینتی منانے میں مصروف ہے۔ کانگریس نے بابا صاحب امبیڈکر کی بھی توہین کی تھی۔

       

       
      First published: