உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کرناٹک الیکشن: راہل نے کہا، 2019 میں جیتی کانگریس تو میں بنوں گا وزیر اعظم

    کانگریس صدر راہل گاندھی

    کانگریس صدر راہل گاندھی

    بنگلورو۔ کانگریس صدر راہل گاندھی کرناٹک اسمبلی انتخابات کے ساتھ ساتھ مشن 2019 کا ایجنڈہ بھی سیٹ کر رہے ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      بنگلورو۔ کانگریس صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ اگر 2019کے انتخابات میں ان کی پارٹی واحد بڑی جماعت بن کر ابھرتی ہے تو وہ وزیراعظم بنیں گے۔ انہوں نے بنگالورو میں اہم شخصیتوں سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ آیا وہ وزیراعظم بنیں گے تو انہوں نے اس کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ سب کچھ کانگریس پارٹی کے مظاہرہ پر منحصر ہے۔ راہل گاندھی نے آئندہ سال ہونے والے انتخابات میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے پر وزیراعظم بننے کا دوسری مرتبہ اشارہ دیا ہے۔


      گزشتہ سال ستمبر میں امریکہ کی برکلی یونیورسٹی میں طلبہ سے خطاب کے دوران راہل نے کہا تھا کہ 2019کے عام انتخابات کے لئے وزیراعظم کا امیدوار بننے کے لئے وہ تیار ہیں۔اس ماہ کے اوائل میں راہل گاندھی نے دعوی کیا تھا کہ بی جے پی 2019کے انتخابات میں کامیاب نہیں ہوگی اور وزیراعظم مودی متحدہ اپوزیشن کے سبب وارانسی کی نشست سے شکست کھائیں گے۔ راہل نے کرناٹک کی انتخابی مہم کے سلسلہ میں بنگالورو میں میڈیا سے با ت کرتے ہوئے کہا کہ امیت شاہ قتل کے ملزم ہیں۔ ان کی کوئی ساکھ نہیں ہے۔بی جے پی جوایمانداری ،شرافت کی بات کرتی ہے، کا صدر ایسا شخص ہے جو قتل کا ملزم ہے۔


      انہوں نے یدی یورپا کو وزیراعلی کا امیدوار بنانے کے بی جے پی کے فیصلہ پر سوال اٹھائے۔ اس سوال پر کہ آیا2019کے انتخابات میں کانگریس کے واحد بڑی جماعت کے طورپر ابھرنے پر وہ وزیراعظم بنیں گے تو راہل نے کہا کہ کیوں نہیں۔ ایک سوال کے جواب میں راہل نے کہا کہ یہ سب کانگریس پارٹی کے مظاہرہ پر منحصر ہے ۔ اگر کانگریس واحد بڑی جماعت بن کر ابھرتی ہے تو اس سوال کا جواب ہے ہاں۔ انہوں نے کہا کہ ہم وزیراعظم سے بار بار یہ پوچھ رہے ہیں کہ انہوں نے رشوت خور شخص کا انتخاب وزیراعلی کے امیدوار کے طورپر کیوں کیا؟ انہوں نے ایسے شخص کاانتخاب کیوں کیا جو جیل میں رہ چکا ہے۔


      انہوں نے بی جے پی پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کے تمام اداروں پر قبضہ جمانے کی آرایس ایس ۔بی جے پی کی جانب سے منظم انداز میں کوشش کی جارہی ہے۔وہ تمام اداروں کو نشانہ بنارہے ہیں اور کانگریس پارٹی و اپوزیشن ان کی ان کوششوں کی مزاحمت کر رہے ہیں ۔ملک کے عوام بھی ان کی مزاحمت کر رہے ہیں۔ وزیراعظم نے بنگالورو کے نوجوانوں کو ملازمتوں کا وعدہ کیا تھا تاہم ان کے خود کے وزرا نے اعتراف کیا ہے کہ بے روزگار ی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی ہے۔


      First published: