ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک میں صحافیوں کو فرنٹ لائن ورکر قرار دیا گیا، ترجیحی بنیادوں پر دی جائے گی ویکسین

وزیراعلی بی ایس یدیورپا (BS Yediyurappa) نے کہا ہے کہ ’’صحافیوں کے ساتھ فرنٹ لائن ورکرز کی طرح برتاؤ کیا جائے گا اور انہیں ترجیحی بنیاد پر ویکسین دی جائے گی‘‘۔

  • Share this:
کرناٹک میں صحافیوں کو فرنٹ لائن ورکر قرار دیا گیا، ترجیحی بنیادوں پر دی جائے گی ویکسین
یدی یورپا ۔ فائل فوٹو ۔ اے این آئی ۔

بنگلورو : کرناٹک حکومت نے منگل کے روز صحافیوں کو فرنٹ لائن کووڈ واریئر کی طرح سمجھنے اور ترجیحی بنیادوں پر ان کو ٹیکہ لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعلی بی ایس یدیورپا (BS Yediyurappa) نے ریاست میں بڑھتے ہوئے کورونا کے کیسوں پر قابو پانے کے لئے کابینہ کی خصوصی میٹنگ کے بعد صحافیوں کو اس بات سے آگاہ کیا ہے۔ وزیراعلی بی ایس یدیورپا (BS Yediyurappa) نے کہا ہے کہ ’’صحافیوں کو فرنٹ لائن ورکرز کی طرح برتاؤ کیا جائے گا اور انہیں ترجیحی بنیاد پر ویکسین دی جائے گی‘‘۔


تاہم انہوں نے صحافیوں سے اپیل کی کہ وہ کووڈ۔19 کے کیسوں کو اس انداز سے کور نہ کریں کہ اس سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل جائے۔ ریاست کے ساتھ ساتھ ملک میں بھی ہنگامی صورتحال ہے۔ یہ میڈیا کی ذمہ داری ہے ۔ یدیورپا نے اشارہ کیا کہ ’’خامیوں اور کوتاہیوں کی نشاندہی کرنا ضروری ہے۔ لیکن ایک مسئلے کو مسلسل ظاہر کرنا لوگوں میں خوف پیدا کرنے کے برابر ہوگا‘‘


کابینہ نے ریمڈیسیور انجیکشن کی پانچ لاکھ خوراکیں اور ایک لاکھ آکسیجن درآمد کرنے کا فیصلہ کیا۔ وزیر اعلی نے کمپنی کے عہدیداروں، ان کے ایجنٹوں اور درمیانی افراد کی جانب سے بلیک مارکیٹنگ کرنے والوں کے خلاف متنبہ کیا ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ’’کابینہ نے آکسیجن اور ریمڈیسیویر سپلائی، بستر کی دستیابی، کووڈ کال سنٹرز اور آئی سی یو فراہمی اور ان سے کی نگرانی کے لئے بھی وزراء کا تقرر کرنے کا فیصلہ کیا۔


ان کے مطابق ضلع انچارج وزراء کو اپنے اپنے ضلع میں کیمپ لگانے کے لئے کہا گیا ہے اور کووڈ کیسز کو قابو میں کرنے کے لئے مکمل اختیار دیا گیا ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ مزید آکسیجن اور ریمیڈیسیور ادویات کی خریداری کے لئے ہم مرکزی حکومت کے ساتھ مستقل رابطے میں ہیں۔ اضلاع میں زیادہ سے زیادہ کووڈ کیئر سنٹرز کھولے جائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کورونا کنٹرول کے لیے ڈاکٹروں اور نرسنگ عملہ کی تقرری کے لئے مناسب کارروائی کی جائے گی۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 05, 2021 11:21 AM IST