ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

جشن آمد : بنگلورو میں 12 روزہ محافل مصطفی کا انعقاد

کورونا وبا کی وجہ سے عائد کی گئی پابندیوں کو دیکھتے ہوئے مسجد میں منعقد ہونے والی محفل کو انٹرنیٹ کے ذریعہ لائیو ٹیلی کاسٹ کیا جارہا ہے ۔ تاکہ جو لوگ مسجد نہیں آپا رہے ہیں ، اپنے گھروں میں رہ کر حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و سلم کی سیرت کو سنیں اور اس پر عمل کریں ۔

  • Share this:
جشن آمد : بنگلورو میں 12 روزہ محافل مصطفی کا انعقاد
جشن آمد : بنگلورو میں 12 روزہ محافل مصطفی کا انعقاد

ماہ ربیع الاول کا آغاز ہوچکا ہے ۔ 30 اکتوبر بروز جمعہ عید میلاد النبی پورے ملک میں منائی جائے گی ۔ کرناٹک بھر میں جشن میلاد کو منانے کی تیاریاں شروع ہوچکی ہیں ۔ بنگلورو میں سنی دعوت اسلامی نے 12 روزہ محافل مصطفٰی صلی اللہ علیہ و سلم کا انعقاد کیا ہے ۔ یکم ربیع الاول سے 12 ربیع الاول تک روزانہ بعد نماز عشاء مسجد غریب نواز میں یہ محفل منعقد ہورہی ہے ۔ سنی دعوت اسلامی کے نگراں مولانا محمد عظمت اللہ خان رضوی نے کہا کہ ہر سال ماہ ربیع الاول کے آغاز کے ساتھ 12 روزہ محافل مصطفٰی صلی اللہ علیہ و سلم منعقد کی جاتی ہیں ۔ اس سال بھی یہ سلسلہ جاری ہے۔


کورونا وبا کی وجہ سے عائد کی گئی پابندیوں کو دیکھتے ہوئے مسجد میں منعقد ہونے والی محفل کو انٹرنیٹ کے ذریعہ لائیو ٹیلی کاسٹ کیا جارہا ہے ۔ تاکہ جو لوگ مسجد نہیں آپا رہے ہیں ، اپنے گھروں میں رہ کر حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و سلم کی سیرت کو سنیں اور اس پر عمل کریں ۔ مولانا نے کہا کہ ان محفلوں کو منعقد کرنے کے ساتھ ساتھ مسجد آنے والے تمام مصلیوں اور محفلوں میں آن لائن جڑنے والے سبھی افراد سے کثرت کے ساتھ درود شریف پڑھنے کی تلقین کی جارہی ہے ۔ اس پوری مہم کے ذریعہ 12 ربیع الاول تک 12 کروڑ درود شریف پڑھنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے ۔ 12 ربیع الاول کی شام منعقد ہونے والی اس کڑی کی آخری محفل میں 12 کروڑ درود پاک کا نذرانہ تاجدار مدینہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ و سلم کی بارگاہ میں پیش کیا جائے گا ۔


12 روزہ محافل مصطفٰی میں ہر دن ایک موضوع پر خطاب ہوتا ہے۔ مولانا محمد عظمت اللہ خان رضوی اور مولانا اقرا مصباحی عوام سے مخاطب ہوتے ہیں ۔ مولانا محمد عظمت اللہ خان رضوی نے کہا کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ و سلم کی زندگی   پوری انسانیت کیلئے بہترین نمونہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی شخص کو ایک اچھا انسان ، ایک اچھا ٹیچر، ایک اچھا انجنئیر، ایک اچھا ڈاکٹر، ایک اچھا تاجر بننا ہو تو آپ صلی اللہ علیہ و سلم کی سیرت پر عمل کرنا ضروری ہے ۔  مولانا نے کہا کہ نبی پاک کا کردار اعلی تھا ۔ مکہ شریف میں لوگ، جو ابھی ایمان نہیں لائے تھے، اپنی امانتیں حضور صلی اللہ علیہ و سلم کے پاس رکھا کرتے تھے ۔ آپ امین تھے، صادق تھے ، آپ نے سب سے اعلی و ارفع کردار اور اخلاق کا نمونہ پوری دنیا کیلئے پیش کیا ہے ۔ بگڑی ہوئے انسانوں کو صحیح راستہ بتایا ہے ۔ لہذا  آپ صلی اللہ علیہ و سلم نے اپنے اخلاق اور کردار سے اسلام کو پھیلایا ہے ۔


12 روزہ محافل مصطفٰی میں ہر دن ایک موضوع پر خطاب ہوتا ہے۔
12 روزہ محافل مصطفٰی میں ہر دن ایک موضوع پر خطاب ہوتا ہے۔


مولانا محمد عظمت اللہ نے کہا کہ آپ صلی اللہ علیہ و سلم انسانی حقوق کے سب سے بڑے محافظ اور علمبردار تھے ۔ آپ نے مزدوروں ، خواتین ، یتیموں ، بیواؤں ، مظلوموں کو ان کے حقوق دلوائے اور سماج میں انصاف قائم کیا ۔ مولانا نے کہا کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے علم دین اور قرآن کہ روشنی سے پوری جہالت کو دور کیا۔ قرآن آپ کا سب سے بڑا معجزہ ہے ۔ لہذا جس کسی کو بھی دنیا میں کامیاب ہونا ہو تو وہ رسول صلی اللہ علیہ و سلم کی زندگی کو دیکھے ۔ ان کی سیرت اور تعلیمات پر عمل کرے ۔ انہیں اپنا رول ماڈل بنالے، تاکہ دنیا اور آخرت دونوں میں کامیابی حاصل کرسکے ۔

سنی دعوت اسلامی بنگلورو نے واضح کیا ہے کہ اس مرتبہ کورونا وبا کی وجہ سے حکومت کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے جشن عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ و سلم کا جلوس نہیں نکالا جائے گا ۔ عید میلاد کے دن مسجد غریب نواز میں نماز فجر کے بعد حضور اقدس صلی اللہ علیہ و سلم کے موئے پاک کی زیارت کا اہتمام کیا گیا ہے ۔ جمعہ کی نماز سے قبل جشن عید میلاد پر خطاب ہوگا ۔ جلوس اور عوامی مقامات پر جلسہ منعقد نہیں کئے جائیں گے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 21, 2020 11:42 PM IST