ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک : کانگریس کے مسلم لیڈروں کی مشترکہ کوشش رنگ لائی ، پارٹی نے اس مسلم امیدوار کو دیا ایم ایل سی کا ٹکٹ

کرناٹک میں ایم ایل سی کی 7 نشستوں کیلئے بی جے پی کے 4 ، کانگریس کے 2 اور جے ڈی ایس کے ایک امیدوار نے آج کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔

  • Share this:
کرناٹک : کانگریس کے مسلم لیڈروں کی مشترکہ کوشش رنگ لائی ، پارٹی نے اس مسلم امیدوار کو دیا ایم ایل سی کا ٹکٹ
کرناٹک : کانگریس کے مسلم لیڈروں کی مشترکہ کوشش رنگ لائی ، پارٹی نے اس مسلم امیدوار کو دیا ایم ایل سی کا ٹکٹ

کرناٹک میں ایم ایل سی کی 7 نشستوں کیلئے ہورہے انتخابات کیلئے آج کاغذات نامزدگی داخل کئے گئے ۔ بنگلورو میں بی جے پی ، کانگریس اور جے ڈی ایس کے امیدواروں نے اپنے اپنے لیڈروں کے ساتھ  ودھان سودھا پہنچ کر کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔ حکمراں سیاسی جماعت بی جے پی سے 4 امیدوار ایم ٹی بی ناگراج ، آر شنکر ، سنیل ویلاپورے اور پرتاپ سنہا نائک نے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔ کانگریس سے سینئر لیڈر بی کے ہری پرساد اور سابق ریاستی وزیر نصیر احمد نے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کئے۔ جبکہ جے ڈی ایس سے گووند راجو نے کاغذات نامزدگی داخل کئے ۔


اس طرح  قانون ساز کونسل کی 7 نشستوں کیلئے بی جے پی ، کانگریس اور جے ڈی ایس سے 7 امیدواروں نے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کئے ہیں ۔ اس کے علاوہ آزاد امیدوار نے بھی کاغذات نامزدگی داخل کئے ہیں ۔  29 جون کی صبح 9 تا شام 4 بجے تک ووٹنگ عمل میں آئے گی اور اسی دن نتائج کا اعلان ہوگا ۔ ریاست میں ایم ایل سی انتخابات کے پیش نظر حالیہ دنوں میں سیاسی پارٹیوں میں زبردست لابئنگ دیکھنے کو ملی تھی ۔ کانگریس کے حق میں آنے والی دو نشستوں کیلئے تقریبا 80 امیدواروں نے درخواست دی تھی ۔ مختلف طبقہ کے لیڈران اپنے اپنے امیدواروں کیلئے ٹکٹ حاصل کرنے کیلئے کوشاں تھے ۔


حال ہی میں سابق مرکزی وزیر کے رحمن خان کی قیادت میں کانگریس کے مسلم لیڈروں کے وفد نے پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ڈی کے شیوکمار سے ملاقات کی تھی۔


حال ہی میں سابق مرکزی وزیر کے رحمن خان کی قیادت میں کانگریس کے مسلم لیڈروں کے وفد نے پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر ڈی کے شیوکمار سے ملاقات کی تھی۔ پارٹی کے حصہ میں آنے والی 2 نشستوں میں کسی ایک مسلم امیدوار کو نمائندگی دینے کا پرزور مطالبہ کیا تھا ۔ ان مشترکہ کوششوں کے بعد پارٹی نے نصیر احمد کو ایم ایل سی کا ٹکٹ دیا ۔

کاغذات نامزدگی داخل کرنے کے بعد نصیراحمد  کہا کہ کانگریس پارٹی نے ہمیشہ سماج کے تمام طبقوں ، ذاتوں کے ساتھ انصاف کو رواں رکھا ہے ۔ اسی ماہ مسلم طبقہ کے تین ایم ایل سیز کی معیاد مکمل ہورہی ہے ۔ مسلم طبقہ کو یہ خدشہ لاحق تھا کہ کونسل میں ان کی نمائندگی  مزید کم ہو جائے گی ۔ پارٹی نے اس مسئلے کو دیکھتے ہوئے قانون ساز کونسل میں اقلیتی طبقے کو نمائندگی دی ہے ۔ نصیر احمد نے کہا کہ انہیں دوبارہ ایم ایل سی بننے کا موقع فراہم کرنے پر وہ پارٹی کے تمام لیڈروں کا شکریہ ادا کرتے ہیں ۔

دوسری جانب بی جے پی کے اقلیتی لیڈروں نے بھی پارٹی سے کسی ایک مسلم نمائندہ کو ایم ایل سی بنانے کی درخواست کی تھی ۔  لیکن پارٹی نے اس درخواست پر غور نہیں کیا ۔ بی جے پی اقلیتی مورچہ کے سینئر لیڈر اور کرناٹک حج کمیٹی کے رکن معین الدین نے کہا کہ آنے والے دنوں میں حکومت قانون ساز کونسل کی 5 نشستوں کیلئے نامزدگیاں کرنے والی ہے ۔ اس موقع پر حکومت اقلیتی مورچہ کی درخواست پر ضرور غور کرے گی ۔
First published: Jun 18, 2020 07:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading