ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں ٹی آر ایس کی بڑی کامیابی، وزیراعلیٰ کے بیٹے کی پوزیشن مزید مستحکم

تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں زبردست کامیابی کے بعد ریاست تلنگانہ کےوزیرمیونسپل ایڈمنسٹریشن کے ٹی راما راؤ نے کامیابی کے جشن میں شامل ہوتے ہوئےکہا کہ گزشتہ اسمبلی کے انتخابات کے بعد مسلسل الیکشن میں کامیابی ٹی آر ایس پر عوام کے گہرے اعتماد کو ظاہر کرتی ہے'۔

  • Share this:
تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں ٹی آر ایس کی بڑی کامیابی، وزیراعلیٰ کے بیٹے کی پوزیشن مزید مستحکم
تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں ٹی آر ایس کی بڑی کامیابی۔ فائل فوٹو

اس میں شاید ہی کسی کو کوئی شبہ تھا کہ تلنگانہ میں اس ہفتہ منعقدہ میونسپل الکشنس میں کوئی معجزہ ہوگا۔ آج ان الکشنس کے نتایج  بھی توقع کے عین مطابق رہے۔ تلنگانہ کے میونسپل الیکشن میں زبردست کامیابی کے بعد ریاست تلنگانہ کےوزیرمیونسپل ایڈمنسٹریشن کے ٹی راما راؤ نے کامیابی کے جشن میں شامل ہوتے ہوئےکہا کہ گزشتہ اسمبلی کے انتخابات کے بعد مسلسل الیکشن میں کامیابی ٹی آر ایس پر عوام کے گہرے اعتماد کو ظاہر کرتی ہے'۔ جس طرح مقامی انتخابات میں عوام کا رجحان اکثرحکمران جماعت کی طرف ہوتا ہے، اسی طرح اس الکشن کے نتایج بھی تلنگانہ راشٹریہ سمیٹی (ٹی آر ایس) کے حق میں رہے۔


اس الیکشن سے پہلے ریاستی حکومت نے نئے میونسپل ایکٹ کے ذریعہ 75 نئے میونسپل قائم کئے اور شہر حیدرآباد کے مضافاتی اطراف علاقہ کو 7 نئے میونسپل کارپوریشن میں تبدیل کیا- کل ملاکر 120میونسپل اور 9 میونسپل کا رپوریشن یعنی کل ملا کر 129 میونسپل باڈیزمیں ٹی آرایس کو 117 حلقوں میں اکثریت حاصل ہوئی ہے۔ میونسپل انتخابات کے نتائج سے مسرور اور مطمئن کے ٹی آر نےکہا کہ "ریاست بھر میں خاص طورپرحیدرآباد میں جس طرح تیزی سے اربنائیزیشن ہوا ہے، اس کیلئے ہم نے شہری علاقوں کیلئے میونسپل ایکٹ متعارف کروایا ہے۔ عوام کو امید ہےکہ ہم ان کی توقعات پر پورے اتریں گے، اسی لئےانہوں نے ہمیں کامیاب کیا ہے'۔ ان الکشن کے نتائج کو ریاست کے وزیراعلیٰ کے چندر شیکھر کے بیٹے ٹی راما راؤ کے حوالہ سے اس لئے بھی دیکھا جا رہا تھا کہ کیونکہ  کے ٹی آر منسٹر آف میونسپل ایڈمنسٹریشن بھی ہیں۔ وہ تلنگانہ راشٹریہ سمیتی کے کارگزار صدر کے عہدے پر بھی فائزہیں۔ ظاہر ہے اس الیکشن میں کامیابی  کے بعد حیدرآباد میں واقع ٹی آر ایس کے صدر دفتر تلنگانہ بھون میں  پارٹی کی جیت کے جشن میں کے ٹی آر کے کٹ آوٹ واضح طور پر دکھائے دے رہے تھے۔

اپوزیشن جماعتوں کی مایوس کن کارکردگی

9 میونسپل کارپوریشن میں سے سات میں تلنگانہ راشٹریہ سمتی کو واضح اکثریت حاصل ہوئی ہےجبکہ کانگریس  اور بی جے پی کسی بھی کارپوریشن میں واضح اکثریت حاصل نہیں کرپائیں۔ نظام آباد اور راما گنڈم میونسپل کارپورشنس کے نتایج معلق ہیں۔ نظام آباد کے 60 وارڈوں میں بی جے پی 28، مجلس اتحاد المسلمین 18، ٹی آرایس 13 جبکہ کانگریس کو دو وارڈوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

جبکہ راما گنڈم کارپوریشن کے 50 حلقوں میں ٹی آر ایس کو 19، کانگریس کو 11 فارورڈ بلاک کو 9 اور بی جے پی کو پانچ وارڈوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ ان دونوں کا پوریشن میں کس کا مئیر منتخب ہوگا یہ تو 27 جنوری کو ہی معلوم ہوگا، لیکن امکانات یہ ہیں کہ نظام آباد اور راما گنڈم کارپوریشن میں بھی تلنگانہ راشٹریہ سمیٹی اپنایا اپنی حمایت سے مئیر منتخب کروانے میں کامیاب ہو جائے گی۔ ان میونسپل الیکشن میں 120 میونسپل میں کانگریس کو صرف 4 اور پی جے پی کو صرف 3 میونسپل میں اکثریت حاصل ہوئی ہے جبکہ مجلس اتحاد المسلمین نے پہلے کی طرح بھیسہ میونسپل حلقہ پر اپنا قبضہ برقرار رکھا ہے۔ کریم نگر میونسپل کارپوریشن کیلئے ونٹنگ کی تاریخ 27 جنوری مقرر ہے۔
First published: Jan 25, 2020 11:16 PM IST