உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایس آئی ٹی جانچ میں انکشاف- قتل کا منظم سازش تھا لکھیم پور سانحہ، اب آشیش مشرا کی مشکلات میں ہوگا اضافہ؟

    Lakhimpur Kheri Case Updates: اترپردیش کے لکھیم پور میں تکونیا سانحہ (Tikunia Case) کے تین ماہ بعد ایس آئی ٹی (SIT) کی جانچ میں بڑا انکشاف ہوا ہے۔ جانچ ٹیم نے اسے قتل کی منظم سازش بتاتے ہوئے اہم ملزم مرکزی وزیر مملکت اجے مشرا کے بیٹے آشیش مشرا (Ashish Mishra) سمیت سبھی ملزمین پر کئی سنگین سیکشن کا اضافہ کردیا ہے۔

    Lakhimpur Kheri Case Updates: اترپردیش کے لکھیم پور میں تکونیا سانحہ (Tikunia Case) کے تین ماہ بعد ایس آئی ٹی (SIT) کی جانچ میں بڑا انکشاف ہوا ہے۔ جانچ ٹیم نے اسے قتل کی منظم سازش بتاتے ہوئے اہم ملزم مرکزی وزیر مملکت اجے مشرا کے بیٹے آشیش مشرا (Ashish Mishra) سمیت سبھی ملزمین پر کئی سنگین سیکشن کا اضافہ کردیا ہے۔

    Lakhimpur Kheri Case Updates: اترپردیش کے لکھیم پور میں تکونیا سانحہ (Tikunia Case) کے تین ماہ بعد ایس آئی ٹی (SIT) کی جانچ میں بڑا انکشاف ہوا ہے۔ جانچ ٹیم نے اسے قتل کی منظم سازش بتاتے ہوئے اہم ملزم مرکزی وزیر مملکت اجے مشرا کے بیٹے آشیش مشرا (Ashish Mishra) سمیت سبھی ملزمین پر کئی سنگین سیکشن کا اضافہ کردیا ہے۔

    • Share this:
      لکھیم پور کھیری: اترپردیش کے لکھیم پور (Lakhimpur Kheri Incident) میں تکونیا سانحہ (Tikunia Case) کے تین ماہ بعد ایس آئی ٹی (SIT) کی جانچ میں بڑا انکشاف ہوا ہے۔ جانچ ٹیم نے اسے قتل کی منظم سازش بتاتے ہوئے اہم ملزم مرکزی وزیر مملکت اجے مشرا (Ajay Mishra) کے بیٹے آشیش مشرا (Ashish Mishra) سمیت سبھی ملزمین پر کئی سنگین سیکشن کا اضافہ کردیا ہے۔ اس میں دفعہ 307, 326 اور 34 شامل ہے۔ اس کے ساتھ ہی جانچ ٹیم نے بڑھائی گئی سیکشن میں ملزمین کی ریمانڈ لینے کے لئے عدالت میں عرضی داخل کی ہے۔

      واضح رہے کہ تکونیا سانحہ میں چار کسان اور ایک صحافی کے قتل میں مرکزی وزیر مملکت کے بیٹے آشیش مشرا پر مقدمہ درج ہوا تھا، جس میں دفعہ 302، 304 اے، 147 اے، 148، 149، 279، 338 اور 120 بی لگی ہوئی تھی۔ انہیں دفعات میں ایس آئی ٹی نے آشیش مشرا عرف مونو، انکت داس اور سمت جیسوال سمیت سبھی ملزمین کو جیل بھیجا تھا۔ مقدمے کی سماعت ابھی جاری ہے۔

      سماعت میں ایس آئی ٹی نے پایا ہے کہ جیل میں بند سبھی ملزمین نے سیکشن 307 (جان لیوا حملہ) سیکشن 326 (شدید چوٹ پہنچانا) اور سیکشن 34 (ایک رائے) کا جرم کیا ہے۔ ایس آئی ٹی نے مقدمے میں سیکشن 307- 34 اور 326 بڑھا دی ہے۔ بڑھائی گئی دفعات میں ملزمین کی ریمانڈ لینے کے لئے وویچک نے پیر کو عدالت میں عرضی دی ہے۔ اس عرضی میں عدالت نے منگل کو ملزمین کو طلب کیا ہے۔ ایس آئی ٹی نے سماعت کے دوران یہ بھی پایا کہ ملزمین پر سیکشن 304 اے، 279 اور 338 کا جرم نہیں بنتا ہے۔ ایس آئی ٹی نے مقدمے سے سیکشن 304 اے، 338 اور 279 کو ہٹا دیا ہے۔

      حادثہ کا معاملہ نہیں

      ایس آئی ٹی کے اہم جانچ افسر ودا رام دیواکر نے واضح کر دیا ہے کہ یہ لاپرواہی اور سے گاڑی چلاتے ہوئے حادثاتی موت کا کوئی معاملہ نہیں ہے۔ سوچی سمجھی سازش کے تحت بھیڑ کو کچلنے، قتل کرنے، قتل کی کوشش کے ساتھ ہی شدید چوٹ پہنچانے کی سازش کا معاملہ ہے۔ واضح رہے کہ تین اکتوبر کو ہوئے اس حادثہ میں چار کسانوں سمیت 8 افراد کی موت ہوئی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: