ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک میں مندر، مسجد، چرچ کے دروازے عوام کیلئے کھلے، بنگلورو کی چارمینار مسجد میں لوگوں نے جماعت کے ساتھ ادا کی فجر کی نماز

ڈھائی ماہ کے وقفہ کے بعد دیگر عبادت گاہوں کے ساتھ آج سے مسجدوں کے دروازے بھی عوام کیلئے کھل گئے ہیں۔

  • Share this:
کرناٹک میں مندر، مسجد، چرچ کے دروازے عوام کیلئے کھلے، بنگلورو کی چارمینار مسجد میں لوگوں نے جماعت کے ساتھ ادا کی فجر کی نماز
بنگلورو کی چارمینار مسجد میں لوگوں نے جماعت کے ساتھ ادا کی فجر کی نماز

بنگلورو۔ ڈھائی ماہ کے وقفہ کے بعد دیگر عبادت گاہوں کے ساتھ آج سے  مسجدوں کے دروازے بھی عوام کیلئے کھل گئے ہیں۔ بنگلورو سمیت کرناٹک کے مختلف شہروں میں مسلمانوں نے فجر کی نماز جماعت کے ساتھ اداکی۔ بنگلورو کے شیواجی نگر میں واقع چار مینار مسجد کا نیوز 18 اردو نے جائزہ لیا۔ مسجد اہل حدیث چارمینار میں 50 سے زائد مصلیوں نے صبح 5 بجے فجر کی نماز با جماعت ادا کی۔مسجد کے گیٹ پر دو افراد کو خصوصی طور پر تعینات کیا گیاتھا۔ تاکہ مسجد آنے والے ہر شخص کا درجہ حرارت چیک کیا جاسکے اور ماسک پہن کر  لوگ داخل ہوں۔ لہذا یہاں ایک کے بعد ایک مصلی ماسک پہن کر داخل ہوئے۔ سبھوں کا درجہ حرارت چیک کیا گیا اور ہاتھوں پر سنیٹائزر ملتے ہوئے لوگ مسجد کے اندرونی حصے میں  داخل ہوئے۔


تقریبا تمام مصلی گھروں سے ہی وضو بنا کر، کئی افراد اپنے گھروں سے ہی جائے نماز لئے مسجد پہنچے۔ سماجی فاصلے کے ضابطے کے مطابق مسجد کے فرش پر لال لکیروں سے نشاندہی کی گئی ہے۔ لوگوں نے نشاندہی کی گئی جگہوں پر کھڑے ہو کر اطمینان اور سکون کے ساتھ نماز ادا کی۔ عام طور پر کندھے سے کندھا ملا کر صف بنائی جاتی ہے لیکن سماجی فاصلے کی بنیاد پر بنائی گئی صف میں ہر شخص کے درمیان تین سے چار میٹر کا فاصلہ دیکھنے کو ملا۔نماز فجر  کے بعد کورونا کی وبا کے خاتمے کیلئے ، دنیا میں امن و سلامتی کیلئے خصوصی طور پر دعائیں مانگی گئیں۔


مسجد کے خطیب و امام مولانا اعجاز احمد ندوی نے کہا کہ کورونا کی وبا تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہے۔ کرناٹک میں کورونا کے پوزیٹیو کیسوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔ ان حالات میں با ہمت ہوکر زندگی گزارنا ہے۔ مولانا نے کہا کہ مسجدوں اور دیگر عبادت گاہوں کیلئے حکومت نے گائڈ لائنس جاری کئے ہیں۔ عوام کی صحت کی حفاظت کیلئے حکومت نے یہ ہدایات جاری کی ہیں۔ لہذا لوگ ان ہدایات کی پابندی کرتے ہوئے مسجدوں میں نمازیں ادا کریں۔ مسجد کے مصلیوں نے خوشی ظاہر کی کہ انہیں ڈھائی ماہ کے وقفہ کے بعد مسجد میں داخل ہوکر نماز پڑھنے کا موقع ملا ہے۔ مصلیوں نے کہا کہ ایک طرف خوشی ہے تو دوسری طرف کورونا کی خطرناک بیماری کا سامنا ہے۔ مصلیوں  نے کہا کہ وہ احتیاط برتتے ہوئے نمازیں ادا کرینگے۔




مسجد اہل حدیث چارمینار کے بورڈ پر ضروری ہدایات تحریر کی گئی ہیں۔ مسجد کمیٹی نے یہ درخواست کی ہے کہ حالات کے بہتر ہونے تک مریض، بزرگ اور بچے گھروں میں ہی نمازیں ادا کریں۔ مصلیوں سے یہ بھی درخواست کی گئی ہے کہ وہ مسجدوں میں صرف فرض نماز ادا کریں، سنت اور نفل نمازیں گھروں میں ہی ادا کریں۔ مسجد کمیٹی نے یہ اعلان کیا ہے کہ ہر فرض نماز سے دس منٹ قبل اذان دی جائے گی۔ جمعہ کا خطبہ اور نماز 20 منٹ میں مکمل کیا جائے گا۔ مسجد کے اندر اور مسجد سے  باہر جانے کے وقت لوگوں کو سماجی فاصلے کا خیال رکھنا ہوگا۔ اس طرح کی کئی اہم ہدایات مسجد کے بورڈ پر اردو زبان میں تحریر کی گئی ہیں۔

مسجد کے خطیب و امام مولانا اعجاز احمد ندوی نے کہا کہ مسجدوں کے کھلنے پر مسلمان اللہ تعالٰی کا شکر بجا لاتے ہیں۔ حکومت کے گائڈ لائنس پر عمل کرتے ہوئے مسجدوں میں عبادتوں کو انجام دینگے۔ کورونا وائرس کی وبا جلد سے جلد ختم ہو، اس مرض سے ہر شخص کی حفاظت ہو، زندگی معمول کے مطابق رواں دواں ہو، اس سلسلے میں اللہ رب العزت کی بارگاہ میں تمام مسلمان دعا گو ہیں۔
First published: Jun 08, 2020 10:47 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading