உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایران کے رہبر معظم کے وکیل ثانی مولانا سید مہدی علی زادے نے بنگلورو کے قریب پوتن ہلی مسجد کا کیا افتتاح

    Youtube Video

    بنگلورو سے 70 کیلو میٹر کی دوری پر واقع پوتن ہلی دیہات میں شیعہ مسلمانوں نے عالیشان مسجد تعمیر کی ہے۔ بنگلورو کے دورے پر آئے ایران کے عالم دین مولانا سید مہدی علی زادے کے ہاتھوں اس شاندار مسجد کا افتتاح عمل میں آیا

    • Share this:
      ہندوستان میں ہندو مسلم کا اتحاد پوری دنیا کیلئے مثال ہے۔ یہاں ایک ساتھ مندر اور مسجد آباد ہیں۔بنگلورو کے دورے پر آئے ایران کے ایک اعلی مذہبی رہنما مولانا سید مہدی علی زادے نے یہ بات کہی۔ مولانا کے ہاتھوں پوتن ہلی نامی دیہات میں مسجد کا افتتاح عمل میں آیا۔
      بنگلورو سے 70 کیلو میٹر کی دوری پر واقع پوتن ہلی Puttenahalli  Mosque   دیہات میں شیعہ مسلمانوں نے عالیشان مسجد تعمیر کی ہے۔ بنگلورو کے دورے پر آئے ایران کے عالم دین مولانا سید مہدی علی زادے کے ہاتھوں اس شاندار مسجد کا افتتاح عمل میں آیا۔ اس موقع پر ایرانی عالم دین نے کہا کہ ہندوستان میں مختلف مذاہب کے لوگ مل جل کر رہتے ہیں۔ مندر، مسجد، چرچ، گردوارہ آباد ہیں۔ اتحاد کی یہ مثال قابل رشک ہے۔ کرناٹک وقف بورڈ کے رکن مولانا اظہر حسین عابدی نے کہا کہ مسجدوں کو تعلیمی، سماجی سرگرمیوں کا بھی مرکز بنایا جائے۔
      پوتن ہلی دیہات میں شیعہ مسلمانوں کے 300 گھر موجود ہیں۔ یہاں کے مسلمانوں نے تعلیم کے میدان میں نمایاں ترقی کی ہے۔ بڑھتی ہوئی آبادی کو دیکھتے ہوئے انجمن حیدری کے تحت گاوں میں موجود قدیم مسجد کی توسیع کا کام چند سال قبل شروع ہوا۔ تقریبا ایک کروڑ 45 لاکھ روپئے کی لاگت سے مسجد حجتہ العصر کی توسیع عمل میں آئی ہے۔ اب بیک وقت یہاں 800 مصلیان نماز ادا کرسکتے ہیں۔

      یہاں دینی تعلیم کا بھی نظم بنایا گیا ہے۔ مسجد کے جشن افتتاح کے موقع پر علماء کرام کا اعزاز، مشاعرے کا انعقاد عمل میں آیا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: