ہوم » نیوز » No Category

تیرہ سال پرانی مسلم کالونی میں بجلی، پانی اور سیورکا کام اب ہوا شروع‎

کرنول۔ ریاست آندھرا پردیش کے ضلع کرنول کا ادونی شہر اقلیتی آباد ی والا سب سے بڑا شہر ہے۔

  • ETV
  • Last Updated: Apr 27, 2016 05:37 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
تیرہ سال پرانی مسلم کالونی میں بجلی، پانی اور سیورکا کام اب ہوا شروع‎
کرنول۔ ریاست آندھرا پردیش کے ضلع کرنول کا ادونی شہر اقلیتی آباد ی والا سب سے بڑا شہر ہے۔

کرنول۔ ریاست آندھرا پردیش کے ضلع کرنول کا ادونی شہر اقلیتی آباد ی والا سب سے بڑا شہر ہے۔ اس کو مدنظر رکھتے ہوئے تیلگودیشم حکومت نے 13سال قبل مسلم اقلیتوں کے لیے ایک کالونی قائم کی جسے مسلم مائناریٹی کالونی کا نام دیا گیا لیکن اتنا عرصہ گزرنےکے باوجود بھی یہ کالونی بنیادی سہولیات سےمحروم تھی۔


چند ماہ پہلے ای ٹی وی اردو نے اس کالونی کے مسائل پر خصوصی رپورٹ پیش کی تھی جس کے بعد حکومت نے فوری حرکت میں آتے ہوئے پینے کے پانی کا کنکشن ‘ بجلی‘ بیت الخلاء اور ڈرینیج کے کا م شروع کردئیے ہیں۔  لیکن آج تک پکی سڑک کی تعمی عمل میں نہیں لائی گئی ہے۔


اس کالونی میں تقریباً دو سو سے زائد گھرآباد ہیں‘ لیکن اس کالونی میں اسکول، ہسپتال بھی نہیں ہے۔


muslim colony



کالونی میں رہنے والے افراد کا یہ مطالبہ ہے کہ حکومت انہیں پکی سڑک تعمیر کرکے دے تاکہ انہیں پیش آرہی دشواریوں سے بچایا جاسکے۔ کالونی کے رہنے والوں نے یہ مطالبہ کیا ہے کہ حکومت کالونی کے لیے ساٹھ فیٹ روڈ منظور کرکے فوری طور پرانہیں آسانی مہیا کرائے۔

First published: Apr 27, 2016 05:37 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading