ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

طلاق ثلاثہ : مودی حکومت چور دروازے سے مسلم پرسنل لا میں سیندھ لگانے کی کوشش کررہی ہے : دانشوران

مسلم دانشوروں کا کہنا ہے کہ حکومت دانستہ طور پر تین طلاق کے ذریعے مسلم پرسنل لا میں سیندھ لگانے کی کوشش کر رہی ہے۔

  • ETV
  • Last Updated: Oct 12, 2016 07:34 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
طلاق ثلاثہ : مودی حکومت چور دروازے سے مسلم پرسنل لا میں سیندھ لگانے کی کوشش کررہی ہے : دانشوران
مسلم دانشوروں کا کہنا ہے کہ حکومت دانستہ طور پر تین طلاق کے ذریعے مسلم پرسنل لا میں سیندھ لگانے کی کوشش کر رہی ہے۔

گلبرگہ : تین طلاق اورتعداد ازدواج کے معاملہ پر حکومت اور لا کمیشن کے موقف پر مسلم دانشوروں سخت اعتراض کیا ہے ۔ مسلم دانشوروں کا کہنا ہے کہ حکومت دانستہ طور پر تین طلاق کے ذریعے مسلم پرسنل لا میں سیندھ لگانے کی کوشش کر رہی ہے۔ دانشوروں کا کہنا ہے کہ یہ نہیں سمجھنا چاہئے کہ معاملہ یہیں ختم ہو جائے گا بلکہ دور تلک جائے گا۔ دانشور طبقہ نے اس کو یکساں سول کوڈ کی جانب حکومت کا یہ پہلا قدم قرار دیا ۔

دانشور طبقہ کا کہنا ہے کہ حکومت نے دانستہ طور مسلم پرسنل لا کے حساس موضوعات طلاق ثلاثہ اور تعداد ازدواج کو چھیڑا ہے، جس پر اسے کچھ طبقوں سے حمایت مل سکتی ہے۔ ان کہنا ہے کہ حکومت چور دروازے سے مسلم پرسنل لا میں مداخلت کرکے یکساں سول کوڈ کے نفاذ کی راہ ہموار کرنے میں لگی ہے۔

دانشوروں کے مطابق کہ اگر مسلم پرسنل لا میں ایک مرتبہ سیندھ لگ گئی ، تو پینڈورا باکس کھل سکتا ہے، اس لئےمسلمانوں کو ٹھوس حکمت عملی اپنانے کی ضرورت ہے۔ ساتھ ہی ساتھ دانشور وں نے حکومت کے موقف کو مسلمانوں کو منتشر کرنے کی سمت میں ایک قدم قرار دیا۔

First published: Oct 12, 2016 07:34 PM IST