ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بنگلورو میں دہشت گرد تنظیم ISIS ماڈیول کا پردہ فاش، این آئی اے کا دعوٰی، دو افراد گرفتار

ملک کے آئی ٹی شہر بنگلورو میں این آئی اے نے ایک بڑی کارروائی کرتے ہوئے دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس ماڈیول کا پردہ فاش کرنے کا دعوٰی کیا ہے۔ 7 اکتوبر 2020 کو این آئی اے نے 40 سالہ احمد عبدالقادر اور 33 سالہ عرفان ناصر کو گرفتار کیا ہے۔ ان دونوں ملزمین پر سنگین الزامات عائد کئے گئے ہیں۔

  • Share this:
بنگلورو میں دہشت گرد تنظیم ISIS ماڈیول کا پردہ فاش، این آئی اے کا دعوٰی، دو افراد گرفتار
احمد عبدالقادر اور عرفان ناصر

بنگلورو۔ ملک کے آئی ٹی شہر بنگلورو میں این آئی اے نے ایک بڑی کارروائی کرتے ہوئے دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس ماڈیول کا پردہ فاش کرنے کا دعوٰی کیا ہے۔ 7 اکتوبر 2020 کو این آئی اے نے 40 سالہ احمد عبدالقادر اور 33 سالہ عرفان ناصر کو گرفتار کیا ہے۔ ان دونوں ملزمین پر سنگین الزامات عائد کئے گئے ہیں۔


بنگلورو کے گروپن پالیہ سے  احمد عبدالقادر اور فریزر ٹاؤن سے عرفان ناصر کو گرفتار کیا گیا ہے۔ این آئی اے نے دونوں ملزمین کے گھروں پر چھاپے مارتے ہوئے مجرمانہ سرگرمیوں کے مواد اور الیکٹرانک اشیاء بھی ضبط کی ہیں۔ احمد عبدالقادر کا تعلق تمل ناڈو کے رام ناتھ پورم سے ہے جو چنئی کی ایک بینک میں بزنس Analyst کے طور پر کام کررہا ہے۔ عرفان ناصر کا تعلق بنگلورو کے فریزر ٹاؤن سے ہے جو چاول کا تاجر ہے۔ ان دونوں ملزمین پر دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس کیلئے مسلم نوجوانوں کی بھرتی کروانے اور اس کیلئے فنڈز فراہم کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔


این آئی اے (قومی تحقیقاتی ادارے) نے اپنے تحریری بیان میں کہا ہے کہ احمد عبدالقادر اور عرفان ناصر اور ان کے ساتھی حجب التحریر نامی تنظیم کے ارکان ہیں۔ انہوں نے بنگلورو میں قرآن سرکل گروپ قائم کیا ہے، جس کے ذریعہ یہ دونوں ملزمین مسلم نوجوانوں کو انتہا پسندی کی جانب راغب کرنے اور سیریا میں آئی ایس آئی ایس میں شمولیت کیلئے فنڈز فراہم کرنے کا کام انجام دے رہے تھے۔ این آئی اے نے کہا کہ احمد عبدالقادر اور عرفان ناصر نے ڈونیشن حاصل کرتے ہوئے ڈاکٹر عبد الرحمن نامی ملزم اور چند دیگر مسلم نوجوانوں کو سیریا روانہ کیا تھا۔ ان کی جانب سے بھیجے گئے 2 نوجوان سیریا میں مارے گئے ہیں۔


واضح رہے کہ 19 ستمبر 2020 کو این آئی اے نے بنگلورو میں ڈاکٹر عبدالرحمن کو گرفتار کرتے ہوئے از خود مقدمہ درج کیا ہے۔  عبدالرحمن سے جانچ کے دوران اس کے ساتھیوں کے نام سامنے آئے ہیں جنہوں نے 2013-14 میں دہشت گرد تنظیم ISIS میں جوائن ہونے کیلئے سیریا کا دورہ کیا تھا۔ این آئی اے نے کہا ہے کہ اس معاملے کی مزید تحقیقات کے بعد ڈاکٹر عبدالرحمن اور دیگر مسلم نوجوانوں کو انتہاپسند بنا کر سیریا روانہ کرنے میں اہم رول ادا کرنے والے احمد عبدالقادر اور عرفان ناصر نامی ملزمین کا پتہ چلا ہے۔ این آئی اے نے دو دن قبل احمد عبدالقادر اور عرفان ناصر کو گرفتار کرتے ہوئے انہیں بنگلورو میں موجود این آئی اے کی خصوصی عدالت میں پیش کیا ہے۔

عدالت نے ان دونوں ملزمین کو 10 دنوں کیلئے این آئی اے کی تحویل میں سونپا ہے۔ ممنوعہ دہشت گرد تنظیم آئی ایس آئی ایس سے تعلقات رکھنے، بنگلورو کے مسلم نوجوانوں کو انتہاپسندی کی جانب لے جانے اور ان نوجوانوں کو آئی ایس آئی ایس میں بھرتی کرنے کیلئے سازش رچنے کے الزام کے تحت ملزمین کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ این آئی اے نے کہا ہے کہ ایک بڑی سازش کا پتہ لگانے کیلئے اس معاملے میں مزید تحقیقات کی جار ہی ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 09, 2020 12:02 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading