உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چڑیا گھر میں حادثہ ، سیلفی کی کوشش میں نوجوان نے گنوائی جان

    حیدرآباد : حیدرآباد میں گھومنے آئے بہار کے نوجوان کو سیلفی لینے کی خواہش نے موت کے آغوش میں سلا دیا ۔  یہ نوجوان چڑیا گھر میں اپنی بہن کے کنبہ کے ساتھ آیا تھا اور ممنوعہ علاقہ  میں ایک فاؤنٹین  پر چڑھ کر سیلفی لینے کی کوشش کر رہا تھا ۔

    حیدرآباد : حیدرآباد میں گھومنے آئے بہار کے نوجوان کو سیلفی لینے کی خواہش نے موت کے آغوش میں سلا دیا ۔ یہ نوجوان چڑیا گھر میں اپنی بہن کے کنبہ کے ساتھ آیا تھا اور ممنوعہ علاقہ میں ایک فاؤنٹین پر چڑھ کر سیلفی لینے کی کوشش کر رہا تھا ۔

    حیدرآباد : حیدرآباد میں گھومنے آئے بہار کے نوجوان کو سیلفی لینے کی خواہش نے موت کے آغوش میں سلا دیا ۔ یہ نوجوان چڑیا گھر میں اپنی بہن کے کنبہ کے ساتھ آیا تھا اور ممنوعہ علاقہ میں ایک فاؤنٹین پر چڑھ کر سیلفی لینے کی کوشش کر رہا تھا ۔

    • Agencies
    • Last Updated :
    • Share this:
      حیدرآباد : حیدرآباد میں گھومنے آئے بہار کے نوجوان کو سیلفی لینے کی خواہش نے موت کے آغوش میں سلا دیا ۔  یہ نوجوان چڑیا گھر میں اپنی بہن کے کنبہ کے ساتھ آیا تھا اور ممنوعہ علاقہ  میں ایک فاؤنٹین  پر چڑھ کر سیلفی لینے کی کوشش کر رہا تھا ۔

      مرنے والے نوجوان کا نام منجیت چودھری ہے اور اس کی عمر 18 سال بتائی جاتی ہے ۔ وہ بہار کا رہنے والا تھا اور حیدرآباد میں اپنی بہن کے کنبہ کے ساتھ نہرو جولیجكل پارک میں گھومنے آیا تھا ۔ منجیت نے یہاں اپنے فون سے اپنی اور اپنی بہن کے کنبہ کی متعدد تصاویر لیں ۔ اسی دوران وہ پارک کے ممنوعہ علاقہ میں بھی داخل ہو گیا اور ایک فاؤنٹین پر چڑھ کر سیلفی لینے کی کوشش کرنے لگا ، مگر اسی دوران اس کا توازن بگڑگیا اور گر کر اس کی موت ہو گئی ۔

      منجیت کے لاش کو عثمانیہ ہسپتال کے مردہ گھر میں رکھی گئی ہے ۔ بہادرپورہ پولیس اسٹیشن میں اس معاملے میں 174 آئی پی سی کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور تحقیقات جاری ہے ۔
      First published: