اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اویسی نے وزیر اعظم مودی کو حیدرآباد سے الیکشن لڑنے کا دیا چیلنج

    اے آئی ایم آئی ایم کے سربراہ اسد الدین اویسی: فائل فوٹو

    اے آئی ایم آئی ایم کے سربراہ اسد الدین اویسی: فائل فوٹو

    آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ کو حیدرآباد سے الیکشن لڑنے کا چیلنج دیا ہے۔

    • Share this:
      آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ کو حیدرآباد سے الیکشن لڑنے کا چیلنج دیا ہے۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق اویسی نے ایک پروگرام میں کہا، اگر بی جے پی یا کانگریس حیدرآباد میں ساتھ مل کر بھی الیکشن لڑتی ہیں تو بھی ان کا ہارنا طے ہے۔ یہ میرا چیلنج ہے۔ کوئی بھی پارٹی مجھے یہاں ہرا نہیں سکتی۔

      اویسی نے دونوں بڑی قومی پارٹیوں بی جے پی اور کانگریس پر حملہ کرتے ہوئے الزام لگایا کہ یہ دونوں صرف ہندو ووٹ بینک کے لئے پریشان رہتی ہیں۔ مسلمان ان کے لئے کچھ بھی نہیں ہیں۔ اس کی مثال گزشتہ کرناٹک اسمبلی انتخابات میں دیکھی جا سکتی ہے۔

      اے آئی ایم آئی ایم صدر نے کہا کہ بی جے پی نے یہاں کسی بھی مسلم امیدوار کو ٹکٹ نہیں دیا تھا۔ کانگریس کا رویہ بھی اس سے الگ نہیں ہے۔ مسلمانوں کو صرف دھوکہ دیا گیا ہے، ان کی مشکلات اور ضروریات کو سننے والا کوئی نہیں ہے۔



      بتا دیں کہ 1984 سے 2004 تک اسدالدین اویسی کے والد سلطان صلاح الدین اویسی  حیدرآباد سے الیکشن جیتتے ہوئے آئے ہیں۔ جبکہ اس کے بعد سے لے کر اب تک اسدالدین اویسی یہاں سے لوک سبھا رکن پارلیمنٹ منتخب ہوتے رہے ہیں۔

       
      First published: