اپنا ضلع منتخب کریں۔

    جب اسدالدین اویسی نے کہا ’’تو میرے خلاف جاری ہو جاتا فتویٰ‘’۔

    آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی: فائل فوٹو۔

    آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی: فائل فوٹو۔

    اویسی نے کہا کہ، 'نریندر مودی کے خلاف پارلیمنٹ میں عدم اعتماد کی تحریک پیش کی گئی اور انہیں سے کانگریس صدر راہل گاندھی پارلیمنٹ میں گلے لگ گئے۔

    • Share this:
      آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی نے راہل گاندھی کے پارلیمنٹ میں وزیراعظم نریندر مودی کے گلے ملنے پر طنز کسا ہے۔ اویسی نے کانگریس پارٹی اور کانگریس پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ راہل گاندھی کی طرح گلے لگنا تو دور اگر وہ مودی سے ہاتھ بھی ملا لیتے تو ان کے خلاف فتویٰ جاری ہو جاتا۔

      اویسی نے کہا کہ، 'نریندر مودی کے خلاف پارلیمنٹ میں عدم اعتماد کی تحریک پیش کی گئی اور انہیں سے کانگریس صدر راہل گاندھی پارلیمنٹ میں گلے لگ گئے۔ لیکن گلے لگنا تو دور اگر میں نریندر مودی کے پاس جا کر ان سے ہاتھ بھی ملا لیتا تو میرے خلاف فتویٰ جاری کر دیا جاتا۔ راہل گاندھی گلے لگے ہیں لیکن کانگریسیوں کے منھ سے ایک لفظ بھی نہیں نکلا۔
      First published: