ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اسمرتی ایرانی کا بیان شرمناک، ایرانی اور دتاتریہ کے خلاف کارروائی کی جائے: کیجریوال

نئی دہلی۔ حیدرآباد یونیورسٹی میں دلت طالب علم روہت ویملا کی خودکشی کے معاملے میں طالب علموں کا احتجاج آج پانچویں دن بھی جاری ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Jan 21, 2016 03:21 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اسمرتی ایرانی کا بیان شرمناک، ایرانی اور دتاتریہ کے خلاف کارروائی کی جائے: کیجریوال
نئی دہلی۔ حیدرآباد یونیورسٹی میں دلت طالب علم روہت ویملا کی خودکشی کے معاملے میں طالب علموں کا احتجاج آج پانچویں دن بھی جاری ہے۔

نئی دہلی۔ حیدرآباد یونیورسٹی میں دلت طالب علم روہت ویملا کی خودکشی کے معاملے میں طالب علموں کا احتجاج آج پانچویں دن بھی جاری ہے۔ اس معاملے پر سیاست تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی سمیت تمام رہنماؤں کے حیدرآباد یونیورسٹی پہنچنے کے بعد آج دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کیمپس پہنچے۔ یہاں کیجریوال نے احتجاجی طالب علموں سے ملاقات کی۔ اس کے علاوہ وہ روہت کے اہل خانہ سے بھی ملاقات کریں گے۔


کیجریوال نے طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عینی گواہ کا کہنا ہے کہ کوئی مار پیٹ نہیں ہوئی ہے۔ لیکن دو دن بعد سشیل اسپتال میں ایڈمٹ ہو جاتے ہیں۔ کندھے کے اوپر کھرونچ کے کچھ نشانات ہیں۔ اچانک دتاتریہ جی آتے ہیں، اسمرتی ایرانی کو خط لکھتے ہیں۔ ملک مخالف، ذات پرست کہتے ہیں، انتہا پسند کہتے ہیں۔ اسی طرح یہاں کی کمیٹی کہتی ہے کہ کوئی جھگڑا نہیں ہوا۔ وائس چانسلر بدل جاتے ہیں، نئے وائس چانسلر کارروائی کرتے ہیں۔ طالب علموں کو باہر کر دیا جاتا ہے۔ سشیل کمار ہائی کورٹ میں جاتے ہیں تحفظ کے لئے۔ حلف نامہ میں رجسٹرار کہتے ہیں کہ یہاں کوئی مارپیٹ نہیں ہوئی۔


کیجریوال نے کہا کہ اسمرتی ایرانی کا بیان شرمناک ہے۔ اسمرتی ایرانی اور بنڈارو دتاتریہ پر کارروائی ہو۔ مودی جی دونوں کو عہدے سے ہٹائیں۔ وائس چانسلر کو بھی فوری طور پر یونیورسٹی سے نکالا جائے۔ اسمرتی ایرانی پر بھی ایف آئی آر درج ہو۔ اسمرتی ایرانی، دتاتریہ اور وائس چانسلر کی کال ریکارڈ کی جانچ ہو۔ جھوٹ کے لئے ملک سے معافی مانگیں اسمرتی ایرانی۔


کیجریوال نے کہا کہ میں اپیل کرتا ہوں کہ یہ ان کی غنڈہ گردی ہے، اسے برداشت نہیں کرنا۔ میری حکومت کے چار ممبران اسمبلی کو گرفتار کر لیا۔ امبیڈکر جی پر آپ کچھ کرنا چاہتے ہیں تو آپ کا دہلی میں خیرمقدم ہے۔ ہم ہمیشہ ریزرویشن کے حق میں ہیں۔

کسی کے ساتھ بھی ناانصافی ہوتی ہے تو وزیر کی ذمہ داری ہے کہ انصاف دلائے۔ اس پورے معاملے میں گزشتہ دو سال سے بی جے پی حکومت کا جو رویہ رہا ہے، یہ پارٹی کسی کے ساتھ نہیں ہے۔ ہندوؤں کے ساتھ بھی نہیں ہے، مسلمانوں کے ساتھ بھی نہیں ہے۔ آپ روہت کے خط پڑھیں، غریب خاندان سے تھا وہ، دلتوں کے ساتھ ظلم نہیں ہونے دیا جائے گا۔

ہمارا مطالبہ ہے کہ وائس چانسلر کو باہر کیا جائے، اسمرتی ایرانی جی نے جو جھوٹ بولا ہے وہ ملک سے معافی مانگیں۔ وزیر اعظم سے مطالبہ ہے کہ دونوں وزراء کو باہر کریں۔ ایف آئی آر میں تو دتاتریہ جی کا نام ہے، میرا مطالبہ ہے کہ اسمرتی ایرانی کے خلاف بھی کارروائی ہو۔ ایف آئی آر کی بنیاد پر فوراً کارروائی ہو، گرفتاری ہو۔ میں مودی جی کو مشورہ دینا چاہتا ہوں، طالب علموں سے پنگا مت لینا۔
First published: Jan 21, 2016 03:21 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading