ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

سپریم کورٹ شہریت ترمیمی قانون کو منسوخ کردے گا: پرشانت بھوشن کو امید

رشانت بھوشن نےکہا کہ حکومت ملک کے دستور اور تہذیب کوٹھیس پہنچارہی ہے۔ اس لئے خواتین اور نوجوان سڑکوں پر اترآئے ہیں۔ پورے ہندوستان میں سی اے اے کے خلاف احتجاج ہورہے ہیں۔

  • Share this:
سپریم کورٹ شہریت ترمیمی قانون کو منسوخ کردے گا: پرشانت بھوشن کو امید
سپریم کورٹ شہریت ترمیمی قانون کو منسوخ کردے گا: پرشانت بھوشن کو امید

بنگلورو: امبیڈکر بھون میں سی اے اے، این آرسی اور این پی آر پر سیمپوزیم کا انعقاد عمل میں آیا۔ شہر کی مختلف وکلاء تنظیموں نے اس سمپوزیم کا انعقاد کیا۔ سپریم کورٹ کے مشہور ایڈوکیٹ پرشانت بھوشن نےکہا کہ انہیں امید ہےکہ سپریم کورٹ سی اے اے کو مسترد کرے گا۔ پرشانت بھوشن نےکہا کہ حکومت ملک کے دستور اور تہذیب کوٹھیس پہنچارہی ہے۔ اس لئے خواتین اور نوجوان سڑکوں پر اترآئے ہیں۔ پورے ہندوستان میں سی اے اے کے خلاف احتجاج ہورہے ہیں۔


پرشانت بھوشن نے کہاکہ اس وقت اچھائی اور برائی کے درمیان لڑائی جاری ہے۔ ہمیشہ برائی پراچھائی کی فتح ہوئی ہے۔ اس باربھی یہی ہوگا۔ سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس گوپال گوڈا نےکہاکہ شہریت ترمیمی قانون غیرآئینی ہے۔ مذہب کی بنیاد پراگر ظلم وستم کو وجہ بتا کر قانون میں ترمیمی کی گئی ہے تو حکومت نے سری لنکا، مینمار،بھوتان،نیپال،تبت کے مظلومین کوکیوں قانون سے باہر رکھا۔


سپریم کورٹ: فائل فوٹو


جسٹس گوپال گوڈا نے کہاکہ سی اے اے کے متعلق عوام میں بیداری پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔اجلاس میں کرناٹک ہائی کورٹ کے ایڈوکیٹ بالن نے کہا کہ ہٹلر کےنظریات سے متاثر ہوکر بی جے پی حکومت سی اے اے جیسا خطرناک قانون نافذ کررہی ہے۔ اس سمپوزیم میں کثیر تعداد میں بنگلورو کے وکلاء، دانشوران اور سماجی کارکنان نے شرکت کی۔
First published: Feb 03, 2020 12:05 AM IST