உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جب ایک طالبہ نے راہل گاندھی سے پوچھا این سی سی پر سوال،پھر اس کے بعد ٹویٹر پر کیا ہوا دیکھئے۔۔

    رناٹک کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس کا اقتدار بر قرار رکھنے کی پرزور کوششوں میں مصروف پارٹی صدر راہل گاندھی کو سنیچر (ہفتہ) کو غیر مطمئن حالات کا سامنا کرنا پڑا۔

    رناٹک کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس کا اقتدار بر قرار رکھنے کی پرزور کوششوں میں مصروف پارٹی صدر راہل گاندھی کو سنیچر (ہفتہ) کو غیر مطمئن حالات کا سامنا کرنا پڑا۔

    رناٹک کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس کا اقتدار بر قرار رکھنے کی پرزور کوششوں میں مصروف پارٹی صدر راہل گاندھی کو سنیچر (ہفتہ) کو غیر مطمئن حالات کا سامنا کرنا پڑا۔

    • Share this:
      کرناٹک۔کرناٹک کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس کا اقتدار بر قرار رکھنے کی پرزور کوششوں میں مصروف پارٹی صدر راہل گاندھی کو سنیچر (ہفتہ) کو غیر مطمئن حالات کا سامنا کرنا پڑا۔راہل گاندھی در اصل ہفتے کو میسور میں واقع مہارانی مہیلا آرٹس کالج کی طالبات کے درمیان تھے۔اسی دوران ایک طالبہ نے راہل سے نیشل کیڈیٹ کاپرس (این سی سی ) سے جڑا ایک سوال پوچھا،جس کا راہل جواب نہیں دے پائے۔

      طالبہ نے سوال کیا "آپ این سی سی "سی"سرٹیفکیٹ امتحان پاس طلبا کو کیا کیا فائدہ دیں گے؟ا س پر راہل گاندھی نے کہا کہ 'انہیں این سی سی اور سی سرٹیفکیٹ سے جڑی جانکاری نہیں ہے۔اس لئے اس بارے میں کچھ نہیں بتا سکتے'۔

      راہل کے جواب کو لیکر ٹویٹ پر کئی یوزر انہیں ٹرول کرنے لگے۔یہاں ایک یوزر نے لکھا،'اٹلی میں کوئی این سی سی ہی نہیں ہے۔ایک دیگر یوزر نے ان کی لاعلمی اور مکمل تیاری نہیں کرنے کو لیکر تنقید کی اور کہا ،'جب آپ کالج کے طلبا سے ملنے جاتے ہیں تو ایسے سوال پوچھے ہی جاتے ہیں۔تیاری نہیں تھی "؟



      حالانکہ یہاں کئی یوزرس کانگریس صدر کا ساتھ بھی دیتے نظر آئے۔انہیں میں سے ایک نے لکھا،"وہ ایماندار ہیں،اس لئے مجھے نہیں لگتا کہ وہ برے ہیں۔یہاں کئی ایسے لیڈر ہیں جو جانتے کچھ نہیں پھر بھی بولتےہیں"۔

      میسور کے اس کالج میں راہل گاندھی کے خطاب کے دوران کچھ اس طرح کے پل بھی دیکھنے کو ملے ۔یہاں ایک طالبہ نے راہل سے گزارش کرتے ہوئے کہا کہ "میں آپ کے ساتھ سیلفی لینا چاہتی ہوں"راہل گاندھی خود اسٹیج سے نیچے اتر کر طالبہ کے ساتھ سیلفی لینے پہنچ گئے۔

      بتادیں کہ کرناٹک میں اسمبلی انتخابات اپریل۔مئی میں ہونے کے امکان ہیں۔ایسے میں راہل گاندھی جنوبی ہندستان میں ایک واحد کانگریس زیر اقتدار ریاست میں اپنا اقتدار برقرار رکھنے کیلئے پر زور کوشش میں مصروف ہیں۔اسی کے مد نظر وہ ہفتے کو میسور کے چامنڈیشوری دیوی مندر پوجا میں دعا کرنے کیلئے پہنچے ،اس دوران کرناٹک سی ایم سدارمیا بھی ان کے ساتھ موجود تھے۔
      First published: