உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آرایس ایس اور کرناٹک کے اصولوں کے مابین جنگ ہے کرناٹک اسمبلی انتخابات: راہل گاندھی

    کانگریس صدر راہل گاندھی: فائل فوٹو۔

    کانگریس صدر راہل گاندھی: فائل فوٹو۔

    میسور: کرناٹک انتخابی تشہیر کے آخری دن کانگریس صدر راہل گاندھی نے راشٹریہ واد کارڈ کھیلتے ہوئے کہاکہ یہ الیکشن کرناٹک کے اصولوں اور آرایس ایس کے درمیان کی جنگ ہے۔

    • Share this:
      میسور: کرناٹک انتخابی تشہیر کے آخری دن کانگریس صدر راہل گاندھی نے راشٹریہ واد کارڈ کھیلتے ہوئے کہاکہ یہ الیکشن کرناٹک کے اصولوں اور آرایس ایس کے درمیان کی جنگ ہے۔

      ایک پریس کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہاکہ یہ الیکشن کرناٹک کے اصول اور آرایس ایس کے درمیان ہے۔ آرایس آپ کی زبان، تہذیب اور یہاں تک کی آپ کے کھانے کے خلاف ہے۔ وہ آپ کی تہذیب وثقافت کو برباد کرنا چاہتے ہیں، لیکن کرناٹک کے لوگ انہیں ایسا نہیں کرنے دیں گے۔ کرناٹک کے لوگوں کو ان کی زبان اور تہذیب پر فخر کرنا چاہئے، اس میں کچھ غلط نہیں ہے۔

      انہوں نے آگے کہا کہ آرایس ایس نے لنگایت طبقہ کے بانی بسونّا کی توہین کی۔ راہل نے کہا کہ آرایس ایس کا اصول ایسے لوگوں کو ختم کرنا ہے جو اپنی تہذیب کو اپنے قریب رکھتے ہیں۔

      انتخابی تشہیر کے آخری دن بی جے پی کی طرف سے اپنے اوپر لگائے گئے الزامات پر بولتے ہوئے راہل نے کہا کہ یہ بی جے پی کی گھبراہٹ کو دکھاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ وہ جانتے ہیں کہ وہ ہار رہے ہیں، اس لئے بہت سارے لیڈر تشہیر کررہے ہیں، لیکن اس سے ووٹروں پر کوئی اثر نہیں پڑ ے گا۔

      سہ رخی اسمبلی (ہنگ اسمبلی) کے امکانات پر بولتے ہوئے کانگریس صدر نے کہا کہ ان کی پارٹی اپنے آپ اقتدار میں آئے گی اور کوئی جوڑ توڑ کی سرکار نہیں بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ گجرات میں میرے کچھ دوستوں نے بتایا تھا کہ کانگریس کو 30-20  سیٹیں ملیں گی، لیکن ہم پوری طرح سے الیکشن جیت گئے۔ حالانکہ وزیر اعظم مودی نے الیکشن جیتنے کے لئے سب کچھ کیا۔

      اپنے سیاسی فائدے کے لئے کرناٹک کے لوگوں کی برسوں کی حصولیابیوں کی توہین کرنے کو لے کر بھی راہل نے وزیراعظم مودی پر حملہ بولا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور آرایس ایس سے کرناٹک کے اصولوں کی حفاظت کرنے کے لئے سدارمیا سرکار یہاں تھی۔

      سودنوں میں کرناٹک میں تقریباً 30 مندروں اور مٹھوں کا دورہ کرچکے راہل گاندھی نے کہا کہ مودی کو ان کے مندر جانے سے بھی پریشانی ہے۔ انہوں نے کہاکہ میں نہیں جانتا کہ میرے مندر جانے سے انہیں کیا پریشانی ہوتی ہے۔

      انہوں نے یہ بھی کہاکہ بنگلور ہندوستان کا فخر ہے اور وزیراعظم مودی اور بی جے پی ایسے گلوبل سٹی کے بارے میں گھٹیا اور بے بنیاد بیان دے رہے ہیں۔ راہل نے کہا کہ وزیراعظم مودی نے بنگلور کے ایچ اے ایل کی جگہ رافل کو کنٹریکٹ دے کر یہاں کے ہزاروں لوگوں کی نوکریاں چھین لیں اور وہ اب نوکریاں دینے کی بات کررہے ہیں۔

      بی جے پی کے سونیا گاندھی کو اٹالین بولنے والے بیان کا جواب دیتے ہوئے راہل نے کہا کہ میری ماں نے اپنی بیشتر زندگی ہندوستان میں گزاری ہے، وہ ہندوستانی ہیں۔ انہوں نے ہندوستان کے لئے قربانیاں دی ہیں۔

      راہل گاندھی نے کرناٹک میں تقریباً 100 دن تک تشہیر کیا، جس میں انہوں نے تقریباً 30 اضلاع کا دورہ کیا۔ انہوں نے چھوٹی بڑی 100 ریلیاں کیں اور 50 روڈ شو میں حصہ لیا۔

      ڈی پی ستیش کی رپورٹ
      First published: