உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کرناٹک کے کسانوں کی بدحالی کے لئے مودی ذمہ دار : راہل گاندھی

    بنگلور:  کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے کرناٹک میں کسانوں کی حالت زار کا ٹھیکرا وزیر اعظم نریندر مودی کے سر پر پھوڑتے ہوئے

    بنگلور: کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے کرناٹک میں کسانوں کی حالت زار کا ٹھیکرا وزیر اعظم نریندر مودی کے سر پر پھوڑتے ہوئے

    بنگلور: کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے کرناٹک میں کسانوں کی حالت زار کا ٹھیکرا وزیر اعظم نریندر مودی کے سر پر پھوڑتے ہوئے

    • Share this:
      بنگلور:  کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے کرناٹک میں کسانوں کی حالت زار کا ٹھیکرا وزیر اعظم نریندر مودی کے سر پر پھوڑتے ہوئے آج الزام لگایا کہ ریاست کے کسانوں کے قرض معافی کے لئے مرکز نے ایک روپیہ بھی نہیں دیا ہے اور نہ ہی ان کی فصل کو ڈیڑھ گنا قیمت دیا۔

      مسٹر گاندھی نے ٹوئٹر پر کرناٹک میں کاشت کی صورت حال پر مسٹر مودی کا ایک ’رپورٹ کارڈ‘ جاری کیا جس میں انہوں نے کہا ہے کہ کانگریسی حکومت والی ریاستوں نے کسانوں کے قرض معاف کرنے کے لئے 8500 کروڑ روپے خرج کئے ہیں جن میں مرکزی حکومت کی ایک روپے کی بھی شراکت نہیں ہے۔

      انہوں نے وزیر اعظم فصل انشورنس منصوبہ میں کسانوں کو کچھ نہیں ملا اور نجی انشورنس کمپنیوں نے زبردست منافع کمایا ہے۔ کسانوں کو ان کی فصل کے لئے کم از کم امدادی قیمت ڈیڑھ گنا بھی نہیں ملا۔ مجموعی طور پر رپورٹ کارڈ میں انہوں نے مسٹر مودی کو گریڈ-F (یعنی فیل) دیا ہے۔
      غور طلب ہے کہ زراعت آئین کی یکساں فہرست میں شامل ہے، یعنی یہ موضوع مرکز اور ریاست دونوں کا ہے۔ ریاست حکومت نفاذ کے لئے ذمہ دار ہے۔
      First published: