உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Raja Singh: راجہ سنگھ منگل ہارٹ پولیس اسٹیشن کا روڈی شیٹر، حیدرآباد پولیس کا دعویٰ، PD ایکٹ کا نفاذ

    ٹی راجہ سنگھ ٹوئٹر (فائل فوٹو)

    ٹی راجہ سنگھ ٹوئٹر (فائل فوٹو)

    بی جے پی کے معطل شدہ ایم ایل اے، روڈی شیٹر اور گستاخ رسول ٹی راجہ سنگھ (Raja Singh) کو حیدرآباد پولیس نے پی ڈی ایکٹ کے تحت چرلہ پلی جیل منتقل کیا ہے۔ جس کے خلاف سماج میں نفرت پھیلانے، قانون کی خلاف ورزی کرنے اور حضرت محمد ﷺ کی شان میں گستاخی سمت کئی کیسوں کے ضمن میں 101 مقدمات درج ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Hyderabad, India
    • Share this:
      Raja Singh arrest again: حیدرآباد پولیس کے مطابق بی جے پی سے معطل شدہ ایم ایل اے ٹی راجہ سنگھ کے خلاف 101 مقدمات درج ہیں، جن میں سے 18 کیس فرقہ وارانہ جرائم سے متعلق ہیں۔ پولیس نے راجہ سنگھ کو منگل ہاٹ پولس تھانے کا روڈی شیٹر بتایا ہے۔ اب اسے پی ڈی ایکٹ کے تحت چرلہ پلی جیل منتقل کیا گیا۔ خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق تلنگانہ پولیس نے بی جے پی کے معطل لیڈر ٹی راجہ سنگھ کو ان کی رہائش گاہ حیدرآباد سے پیغمبر اسلام محمد ﷺ کے خلاف مبینہ تبصرے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔ 23 اگست کے روز مبینہ بیان خلاف حیدرآباد میں زبردست احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔ جو کہ ہنوز جاری ہیں۔

      راجہ سنگھ نے ویڈیو جاری کرتے ہوئے ہندی میں ٹوئٹ کیا کہ ’’مجھے آج یا کل گرفتار کیا جا سکتا ہے۔ میں صرف اتنا کہنا چاہوں گا کہ اگر کوئی میرے ملک کو میرے مذہب کے بارے میں برا کہے گا تو میں اسے اسی کی زبان میں جواب دوں گا، سزا چاہے کچھ بھی ہو، اب ہندو پیچھے ہٹنے والے نہیں ہیں‘‘۔ راجہ سنگھ نے مزید لکھا ہے کہ ’’مجھے امید ہے کہ ہر ہندو اس مذہبی جنگ میں ہمیشہ کی طرح میرا ساتھ دے گا۔ جئے شری رام‘‘

      ٹی راجہ سنگھ ٹوئٹر کے ضمن میں حیدرآباد پولیس کا بیان
      ٹی راجہ سنگھ کے ضمن میں حیدرآباد پولیس کا بیان


      میڈیا رپورٹس کے مطابق حیدرآباد میں بی جے پی کے معطل شدہ ایم ایل اے راجہ سنگھ (Raja Singh) کو منگل ہارٹ پولیس نے دوبارہ گرفتار کرلیا ہے۔ ایک طرف پولیس نے 23 اگست کو نامپلی مجسٹریٹ عدالت کے ذریعہ ایم ایل اے کی ضمانت کے احکامات کے خلاف تلنگانہ ہائی کورٹ سے رجوع کیا اور دوسری طرف اس کے خلاف پرانے مقدمات میں نوٹس جاری کئے گئے۔ میڈیا ذرائع کے مطابق راجہ سنگھ کو پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺ کی گستاخی سے متعلق مقدمات میں نہیں بلکہ سابقہ کیس کے ضمن میں گرفتار کیا گیا ہے۔

      ٹی راجہ سنگھ ٹوئٹر کے ضمن میں حیدرآباد پولیس کا بیان
      ٹی راجہ سنگھ کے ضمن میں حیدرآباد پولیس کا بیان


      راجہ سنگھ کو حیدرآباد سٹی پولیس نے گرفتار کیا اور میڈیکل کے لیے گاندھی اسپتال لے جایا گیا۔ بی جے پی کے معطل شدہ ایم ایل اے، روڈی شیٹر اور گستاخ رسول ٹی راجہ سنگھ (Raja Singh) کو حیدرآباد پولیس نے پی ڈی ایکٹ کے تحت چرلہ پلی جیل منتقل کیا ہے۔ جس کے خلاف سماج میں نفرت پھیلانے، قانون کی خلاف ورزی کرنے اور حضرت محمد ﷺ کی شان میں گستاخی سمت کئی کیسوں کے ضمن میں 101 مقدمات درج ہیں۔



      یہ بھی پڑھیں:

      Hyderabad : ٹی راجا سنگھ کے خلاف احتجاج جاری ، درجنوں مظاہرین کو کیا گیا گرفتار

      یہ بھی پڑھیں:

      Prophet Muhammad: راجہ سنگھ کے خلاف مزید 2 مقدمات درج، دوبارہ گرفتاری کا امکان

      حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اور اے آئی ایم آئی ایم کے صدر بیرسٹر اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) اگر بی جے پی ایک ضمنی انتخاب کے لیے اتنا بیتاب ہے تو عام انتخابات میں کیا کرے گی؟ BJP ریاست کو آگ لگانا چاہتی ہے۔ جلے ہوئے گھر، خالی دکانیں، بند اسکول اور کرفیو چاہتی ہے۔ انشاء اللہ انہیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ تلنگانہ تب تک تشدد سے پاک رہے گا جب تک یہ بی جے پی سے آزاد ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: