ہوم » نیوز » وطن نامہ

آسیان ممالک کی میٹنگ میں بولے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ، آپسی ساتھ سے ختم ہوگی دہشت گردی

ہندوستان کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Rajnath Singh) نے ایک بار پھر دہشت گردی (Terrorism) کو دنیا کے لئے سب سے بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔

  • Share this:
آسیان ممالک کی میٹنگ میں بولے  وزیر دفاع راجناتھ سنگھ، آپسی ساتھ سے ختم ہوگی دہشت گردی
ہندوستان کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Rajnath Singh) نے ایک بار پھر دہشت گردی (Terrorism) کو دنیا کے لئے سب سے بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔

نئی دہلی: آسیان  (ASEAN) کے وزارت دفاع کی میٹنگ میں ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے حصہ لینے والے ہندوستان کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Rajnath Singh) نے ایک بار پھر دہشت گردی (Terrorism) کو دنیا کے لئے سب سے بڑا خطرہ قرار دیا ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا، دہشت گردی  (Terrorism)  اور بنیاد پرستی (Fundamentalism) دنیا کے امن اور سلامتی کے لئے کسی بھی بڑے خطرہ سے کم نہیں ہے۔ وزیر دفاع نے کہا کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے ایک رکن کی حیثیت سے ہندوستان دہشت گردی کو ہر دور میں جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لئے پرعزم ہے۔


دہشت گردی سے مسلسل مقابلہ کر رہے ہندستان کی حالت کے بارے میں جانکاری دیتے ہوئے وزیر دفاع نے کہا کہ آپسی رضامندی سے ہی دہشت گرد رنظیم کو اور ان کے نیٹ ورک کو روکا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنوب مشرقی ایشیا کے علاقے کے ساتھ بھارت کی ایسوسی ایشن نے نومبر 2014 میں وزیراعظم مودی کی طرف سے 'ایکٹ مشرقی پالیسی' پر مبنی ہے۔




اقتصادی تعاون اور ثقافتی تعلقات کو بڑھانے کے لئے اس پالیسی کے اہم عناصر اور انڈو پیسفک خطے کے ممالک کے ساتھ نظریاتی تعلقات قائم کرنے کے لئے انہوں نے ایک بار پھر زور دیا کہ دہشت گردی کے تحفظ کو دنیا بھر میں ایک بڑا خطرہ پیدا کرنا پسند ہے۔ آج دنیا مسلسل دہشت گردی اور بنیاد پرستی سے لڑ رہا ہے۔



وزیر دفاع راجنااتھ سنگھ نے کہا کہ، رانسام ویئر کے واقعات، واناکرائی حملوں اور کرپٹوکرنسی کے واقعات دنیا کے سامنے بہت زیادہ تشویشناک موضوع ہیں۔میٹنگ کے دوران وزیر دفاع راجنااتھ سنگھ نے چین اور پاکستان کا نام نہیں لیا لیکن دہشت گردی پناہ دینے والے  مملاک کا چہرہ بے نقاب کرنے کی کوشش کی ضرور کی ہے۔

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 16, 2021 01:02 PM IST