உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجیہ سبھا اور قانون سازکونسل کے انتخابات، جے ڈی ایس کے مسلم امیدوارکے حق میں مختلف مسلم تنظیمیں

    بنگلورو۔ ریاست کرناٹک کی سیاست اب گرما چکی ہے۔ راجیہ سبھا اورقانون سازکونسل کے انتخابات کے لئےسیاسی پارٹیاں اپنےاپنے امیدواروں کی کامیابی کے لئے   بھرپور کوششیں کررہی ہیں۔

    بنگلورو۔ ریاست کرناٹک کی سیاست اب گرما چکی ہے۔ راجیہ سبھا اورقانون سازکونسل کے انتخابات کے لئےسیاسی پارٹیاں اپنےاپنے امیدواروں کی کامیابی کے لئے بھرپور کوششیں کررہی ہیں۔

    بنگلورو۔ ریاست کرناٹک کی سیاست اب گرما چکی ہے۔ راجیہ سبھا اورقانون سازکونسل کے انتخابات کے لئےسیاسی پارٹیاں اپنےاپنے امیدواروں کی کامیابی کے لئے بھرپور کوششیں کررہی ہیں۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      بنگلورو۔ ریاست کرناٹک کی سیاست اب گرما چکی ہے۔ راجیہ سبھا اورقانون سازکونسل کے انتخابات کے لئےسیاسی پارٹیاں اپنےاپنے امیدواروں کی کامیابی کے لئے   بھرپور کوششیں کررہی ہیں۔ ان انتخابات میں دومسلم امیدواربھی میدان میں ہیں۔


      کرناٹک سے راجیہ سبھا کے لئے چارسیٹوں کےانتخابات ہورہے ہیں۔ ان انتخابات میں کانگریس کے تین، بی جے پی کے ایک اور جےڈی ایس کے ایک امیدوارمیدان میں ہیں۔ جنتادل سیکولر نے صنعتکاراورسماجی کارکن بی ایم فاروق کوراجیہ سبھا کے لئے اپنا امیدوارمنتخب کیا ہے۔


            راجیہ سبھا کےانتخابات میں کسی امیدوار کی جیت  کے لئے45 ایم ایل اے کےووٹ ضروری ہیں۔ جے ڈی ایس کے پاس کُل40 ایم ایل اے موجود ہیں۔ اپنےامیدوارکوکامیاب بنانے کے لیے جے ڈی ایس آزاد ارکان کی تائید حاصل کرنےکی کوشش کررہی ہے۔ لیکن جےڈی ایس کے ضمیراحمد خان اوراقبال انصاری نے پارٹی کے ہی امیدوارکےخلاف ووٹ دینےکا اشارہ دیا ہے۔ اس پیش رفت کے بعد مسلم تنظیمیں ضمیراحمد خان اور اقبال انصاری کے خلاف برہمی کا اظہارکررہی ہیں۔


      karnatak


      دوسری جانب قانون ساز کونسل کےانتخابات میں رضوان ارشد کانگریس کے چوتھے امیدوارہیں۔ کانگریس کی ریاستی یونٹ نے رضوان ارشد کے نام کی سفارش نہیں کی تھی۔ لیکن رضوان ارشد  پارٹی اعلی کمان سے رجوع کرٹکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئےہیں۔

      First published: