ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

دلت اسکالر کی خودکشی کے خلاف احتجاج میں اشوک واجپئی نے ڈی لٹ کی ڈگری واپس کی

نئی دہلی۔ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں ایک دلت پی ایچ ڈی اسکالر روہت ویمولا کی خودکشی پر سخت تشویش ظاہر کرتے ہوئے معروف مصنف اور ادیب اشوک واجپئی نے اعلان کیا کہ وہ حیدرآباد یونیورسٹی کی پیش کردہ اپنی ڈی لٹ کی ڈگری واپس کررہے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 20, 2016 09:00 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دلت اسکالر کی خودکشی کے خلاف احتجاج میں اشوک واجپئی نے ڈی لٹ کی ڈگری واپس کی
نئی دہلی۔ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں ایک دلت پی ایچ ڈی اسکالر روہت ویمولا کی خودکشی پر سخت تشویش ظاہر کرتے ہوئے معروف مصنف اور ادیب اشوک واجپئی نے اعلان کیا کہ وہ حیدرآباد یونیورسٹی کی پیش کردہ اپنی ڈی لٹ کی ڈگری واپس کررہے ہیں۔

نئی دہلی۔  حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں ایک دلت پی ایچ ڈی اسکالر روہت ویمولا کی خودکشی پر سخت تشویش ظاہر کرتے ہوئے معروف مصنف اور ادیب اشوک واجپئی نے  اعلان کیا کہ وہ حیدرآباد یونیورسٹی کی پیش کردہ اپنی ڈی لٹ کی ڈگری واپس کررہے ہیں۔

ایک ٹی وی چینل پر مسٹر واجپئی نے کہا کہ اپنے ضمیر کی آواز پر انھوں نے یہ فیصلہ کیا ہے۔


انھوں نے فروغ انسانی وسائل کی وزیر اسمرتی ایرانی پر زور دیا کہ وہ اس بات پر غور کریں کہ آیا ملک کی یونیورسٹیوں کی تطہیر کی ضرورت ہے۔ مسٹر واجپئی نے کہا کہ’’ ایسا ماحول پیدا کرنے کی ضرورت ہے کہ طلبا اور اسکالر آزادی سے تبادلہ خیال کر سکیں اور علم حاصل کرسکیں۔‘‘ بہت سی سیاسی پارٹیوں نے دلت ریسرچ اسکالر کی خودکشی پر تشویش ظاہر کی ہے اور اس معاملے میں مرکزی وزیر محنت بنڈارو دتہ تریہ کو برخاست کرنے اور ایچ آر ڈی کی وزیر اسمرتی ایرانی کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔


First published: Jan 20, 2016 09:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading