اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اجمیر درگاہ میں صندل کی رسم ادا کی گئی، صندل حاصل کرنے کیلئے زائرین کا لگا تانتا

    صندل لینے کیلئے کافی بھیڑ تھی، اس تقریب میں دنیا بھر سے زائرین نے شرکت کی۔ لوگ اس صندل کو دکھ اور بیماری میں استعمال کرتے ہیں یہ  صندل کی لکڑی سے بنی ہے، اس صندل کو روحانی طاقت ملی ہے۔

    صندل لینے کیلئے کافی بھیڑ تھی، اس تقریب میں دنیا بھر سے زائرین نے شرکت کی۔ لوگ اس صندل کو دکھ اور بیماری میں استعمال کرتے ہیں یہ صندل کی لکڑی سے بنی ہے، اس صندل کو روحانی طاقت ملی ہے۔

    صندل لینے کیلئے کافی بھیڑ تھی، اس تقریب میں دنیا بھر سے زائرین نے شرکت کی۔ لوگ اس صندل کو دکھ اور بیماری میں استعمال کرتے ہیں یہ صندل کی لکڑی سے بنی ہے، اس صندل کو روحانی طاقت ملی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Ajmer, India
    • Share this:
    حضرت خواجہ غریب نواز کے 811ویں عرس کا چاند آج اجمیر میں نظر آ سکتا ہے۔  زائرین خواجہ کے اجمیر آنے کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔  خواجہ غریب نواز کے عرس کے دوران درگاہ میں بہت سی رسومات ادا کی جاتی ہیں۔  ان میں سے ایک اہم رسم صندل کی ہے۔  صندل کی یہ رسم درگاہ کے خادمین ادا کرتے ہیں۔  اس رسم میں دنیا بھر سے زائرین شرکت کرتے ہیں۔  چندن کی یہ تقریب درگاہ میں ادا کی گئی۔  یہ صندل سال بھر خواجہ کی قبر کے ساتھ لگی رہتی ہے۔  کہا جاتا ہے کہ اس صندل میں ایک روحانی طاقت پیدا ہوتی ہے۔

    اس صندل کا عقیدہ ہے کہ یہ صندل بڑی سے بڑی بیماری کو ختم کرتی ہے۔  یہی وجہ ہے کہ دنیا بھر سے آنے والے زائرین اس صندل کو حاصل کرنے کے لیے سرتوڑ کوشش کرتے نظر آتے ہیں۔  یہ صندل درگاہ کے خادموں کے ذریعے زائرین میں تقسیم کیے جاتے ہیں۔  زائرین نے صندل کی لکڑی حاصل کی اور اسے گلاب کے پانی میں ملایا۔  ضرورت پڑنے پر ان صندل کو زائرین کے مرض سے نجات دلانے کے لیے استعمال کیا جائے گا۔  زائرین سال بھر اس موقع کا بے صبری سے انتظار کرتے ہیں۔

    بیرون ممالک میں تہلکہ مچانے والا گروپ پہنچا اجمیر،  ملک میں امن کے لیے کی دعا

    "سر تن سےجدا " کا نعرہ بلند کرنے پردفعی 302,115 IPC کے تحت مقدمہ درج

    صندل کو پیس کر صندل بنایا جاتا ہے جس کے لیے اجمیر کے ایک خاص خاندان کو یہ کام کرنے کا شرف حاصل ہے۔  روزانہ دو پیالے پاو بھر کے مزار خواجہ پر چڑھائے جاتے ہیں جن میں سے ایک پیالہ صندل خادموں کو واپس کر دیا جاتا ہے اور دوسرے کپ کی صندل مزار خواجہ پر رہتی ہے۔  اور ہر سال 28 جمادی الثانی کو یہ سارا صندل اتار دیا جاتا ہے کافی وزن میں جمع ہوتا ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: