ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

شہریت ترمیمی قانون: مائیکرو سافٹ کے سی ای او ستیہ نڈیلا نے کہا۔ ہندوستان میں جو ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے

نڈیلا نے کہا کہ ’’مجھے لگتا ہے کہ جو کچھ ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے۔ میں ایک ایسے بنگلہ دیشی مہاجر کو دیکھنا چاہوں گا جو ہندوستان آتا ہے اور انفوسس کا اگلا سی ای او (چیف ایگزیکٹیو افسر) بنتا ہے۔‘‘

  • Share this:
شہریت ترمیمی قانون: مائیکرو سافٹ کے سی ای او ستیہ نڈیلا نے کہا۔ ہندوستان میں جو ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے
شہریت ترمیمی قانون: ستیہ نڈیلا نے کہا۔ ہندوستان میں جو ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے

نئی دہلی۔ شہریت ترمیمی قانون (CAA) کو لے کر ملک بھر میں جاری احتجاجی مظاہرہ کے درمیان مائیکروسافٹ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر ستیہ نڈیلا (Satya Nadella) نے ہندوستان میں پیدا ہوئی اس صورت حال کو افسوسناک قرار دیا ہے۔ سی اے اے کو لے کر BuzzFeed editor-in-chief بین اسمتھ کے ذریعہ پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں نڈیلا نے کہا ’ مجھے لگتا ہے کہ جو کچھ ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے۔ یہ صرف برا ہے۔ نڈیلا نے کہا کہ ’’مجھے لگتا ہے کہ جو کچھ ہو رہا ہے وہ افسوسناک ہے۔ میں ایک ایسے بنگلہ دیشی مہاجر کو دیکھنا چاہوں گا جو ہندوستان آتا ہے اور انفوسس کا اگلا سی ای او (چیف ایگزیکٹیو افسر) بنتا ہے۔‘‘



وہیں، ایک دیگر بیان میں ستیہ نڈیلا نے کہا کہ ’’مجھے اس جگہ پر بہت فخر ہے جہاں مجھے اپنی ثقافتی وراثت ملتی ہے اور میں نے ایک شہر، حیدر آباد میں پرورش پائی ہے۔ مجھے ہمیشہ لگا کہ یہ بڑا ہونے کے لیے ایک شاندار جگہ ہے۔ ہم نے ساتھ مل کر عید، کرسمس، دیوالی... تینوں تہوار منائیں، جو ہمارے لیے بڑے ہیں۔‘‘دوسری طرف، معروف مورخ رام چندر گہا نے نڈیلا کے اس بیان کا خیرمقدم کیا ہے۔ گہا خود کے اس بات کے حامی رہے ہیں کہ ملک کے آئی ٹی شعبہ کے لوگوں کو اس قانون کے خلاف بولنے کی ہمت دکھانی چاہئے۔


نڈیلا کی جانب سے مائیکرو سافٹ انڈیا کے ذریعہ جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہر ملک کو اپنی سرحدوں کو متعارف کرنے، قومی تحفظ یقینی کرنے اور امیگریشن پالیسی مقرر کرنے کا حق ہے۔ جمہوریت میں یہ سب عوام اور حکومت کے درمیان بحث سے منظر عام پر آتا ہے۔
First published: Jan 14, 2020 12:40 PM IST