ہوم » نیوز » وطن نامہ

این آئی اے ترمیمی قانون کے خلاف عرضی پر مرکز سے جواب طلب

سپریم کورٹ نے قومی تفتیشی ایجنسی(این آئی اے) قانون میں ترمیم کو چیلنج دینے والی عرضی پر مرکزی حکومت سے پیر کو جواب طلب کیا۔ جسٹس روہنگٹن ایف نریمن کی صدارت والی بینچ نے کوہزیکوڈ کی تنظیم’سالیڈریٹی یوتھ مومنٹ‘ کے سکریٹری عمر ایم کی عرضی کی سماعت پر مرکزی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔ عرضی گزار کی جانب سے سینئر وکیل سنتوش پول کی دلیلیں سننے کے بعد سپریم کورٹ نے مرکز سے جواب طلب کیا۔ پول نے دلیل دی کہ این آئی اے ترمیمی قانون سے مرکز اور ریاستوں کے درمیان کوآپریٹو فیڈرلزم کا اصول متاثر ہوتا ہے۔ یہ آئین کے آرٹیکل 14کی خلاف ورزی ہے۔

  • Share this:

سپریم کورٹ نے قومی تفتیشی ایجنسی(این آئی اے) قانون میں ترمیم کو چیلنج دینے والی عرضی پر مرکزی حکومت سے پیر کو جواب طلب کیا۔ جسٹس روہنگٹن ایف نریمن کی صدارت والی بینچ نے کوہزیکوڈ کی تنظیم’سالیڈریٹی یوتھ مومنٹ‘ کے سکریٹری عمر ایم کی عرضی کی سماعت پر مرکزی حکومت کو نوٹس جاری کیا۔ عرضی گزار کی جانب سے سینئر وکیل سنتوش پول کی دلیلیں سننے کے بعد سپریم کورٹ نے مرکز سے جواب طلب کیا۔ پول نے دلیل دی کہ این آئی اے ترمیمی قانون سے مرکز اور ریاستوں کے درمیان کوآپریٹو فیڈرلزم کا اصول متاثر ہوتا ہے۔ یہ آئین کے آرٹیکل 14کی خلاف ورزی ہے۔

First published: Jan 20, 2020 03:08 PM IST