ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

انتہائی شرمناک ! بیہوشی کی دوا دے کر باپ نے کی 19 سالہ بیٹی کی آبروریزی ، ماں کو بتایا تو ملا یہ جواب

پولیس کے مطابق واردات کی جانکاری ملنے پر ملزم باپ کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور معاملہ کی جانچ شروع کردی گئی ہے ۔

  • Share this:
انتہائی شرمناک ! بیہوشی کی دوا دے کر باپ نے کی 19 سالہ بیٹی کی آبروریزی ، ماں کو بتایا تو ملا یہ جواب
علامتی تصویر

کرناٹک کے بنگلورو (Bengaluru) سے ایک شرمسار کردینے والی واردات سامنے آئی ہے ۔ 40 سال کے ایک باپ پر اپنی 19 سال کی بیٹی کی آبروریزی  (Rape) کرنے کا الزام لگا ہے ۔ یہ واقعہ 23 جوان کا بتایا جارہا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق والد نے بیہوشی کی دوا (Sleeping Pills ) دے کر بیٹی کی آبروریزی کی ۔ پولیس کے مطابق واردات کی جانکاری ملنے پر ملزم باپ کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور معاملہ کی جانچ شروع کردی گئی ہے ۔


انگریزی ویب سائٹ انڈیا ٹوڈے کے مطابق متاثرہ کا الزام ہے کہ اس نے اس گھنونی حرکت کے بارے میں اپنی سوتیلی ماں کو بھی بتایا ، لیکن اس نے اس کے بعد خاموشی اختیار کرلی اور کچھ نہیں کیا ۔ ایسے میں پریشان ہوکر لڑکی نے ٹوائلیٹ کلینر پی لیا اور پھر وہ رپورٹ درج کرانے کیلئے پولیس اسٹیشن پہنچ گئی ۔ واقعہ کے بارے میں بتاتے بتاتے وہ تھانہ میں ہی بیہوش ہوکر گر پڑی ۔ پولیس نے فورا اس کو نزدیک کے ایک اسپتال میں داخل کروایا ۔


متاثرہ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ اس کو سردی زکام تھا اور اس نے اپنے والد کو کوئی دوا دینے کیلئے کہا ۔ دوا کھانے کے بعد اگلے دن صبح جب اس کی نیند کھلی تو اس نے دیکھا کہ اس کا باپ اس کے ساتھ سو رہا تھا ، تب جاکر اس کو احساس ہوا کہ اس کی آبروریزی کی گئی ۔


متاثرہ لڑکی نے پھر اس واقعہ کے بارے میں ماں کو بتایا ، لیکن اس کی سوتیلی ماں نے ان باتوں کو نظر انداز کردیا ۔ تاہم پولیس میں شکایت کے بعد اب باپ کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ پولیس اس کی ماں کے رول کی بھی جانچ کررہی ہے ۔
First published: Jun 29, 2020 05:38 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading