اپنا ضلع منتخب کریں۔

    آفتاب جو دکھا رہا ہے کیا وہی سچ ہے؟ پولیس کیلئے پہیلی بنا اس کا رویہ، پڑھنے کیلئے مانگی انگریزی کتاب یا ناول

    تہاڑ جیل ذرائع کے مطابق ملزم آفتاب نے انتظامیہ سے کہا ہے کہ اسے انگریزی ناول یا لٹریچر پڑھنے کیلئے مانگا ہے۔ اب انتظامیہ جلد ہی انہیں انگریزی کتاب یا ناول فراہم کرے گی۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسے ایسی کتاب دی جائے گی جو جرم پر مبنی نہ ہو اور وہ کسی اور کو یا خود کو نقصان نہ پہنچا سکے۔

    تہاڑ جیل ذرائع کے مطابق ملزم آفتاب نے انتظامیہ سے کہا ہے کہ اسے انگریزی ناول یا لٹریچر پڑھنے کیلئے مانگا ہے۔ اب انتظامیہ جلد ہی انہیں انگریزی کتاب یا ناول فراہم کرے گی۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسے ایسی کتاب دی جائے گی جو جرم پر مبنی نہ ہو اور وہ کسی اور کو یا خود کو نقصان نہ پہنچا سکے۔

    تہاڑ جیل ذرائع کے مطابق ملزم آفتاب نے انتظامیہ سے کہا ہے کہ اسے انگریزی ناول یا لٹریچر پڑھنے کیلئے مانگا ہے۔ اب انتظامیہ جلد ہی انہیں انگریزی کتاب یا ناول فراہم کرے گی۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسے ایسی کتاب دی جائے گی جو جرم پر مبنی نہ ہو اور وہ کسی اور کو یا خود کو نقصان نہ پہنچا سکے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai
    • Share this:
      شردھا قتل کیس کو لے کر ایک کے بعد ایک کئی چونکا دینے والے انکشاف ہو رہے ہیں۔ ملزم آفتاب پونا والا نے نارکو ٹیسٹ میں اپنی لیو ان پارٹنر کو قتل کرنے کا اعتراف کرلیا ہے۔ تہاڑ جیل ذرائع کے مطابق ملزم آفتاب نے انتظامیہ سے کہا ہے کہ اسے انگریزی ناول یا لٹریچر پڑھنے کیلئے مانگا ہے۔ اب انتظامیہ جلد ہی انہیں انگریزی کتاب یا ناول فراہم کرے گی۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسے ایسی کتاب دی جائے گی جو جرم پر مبنی نہ ہو اور وہ کسی اور کو یا خود کو نقصان نہ پہنچا سکے۔ ساتھ ہی معاملے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کے مطابق تمام سراغ مل رہے ہیں لیکن اب تک صرف وہی سچائی سامنے آئی ہے جو آفتاب دکھانا چاہتا ہے۔

      دونوں ٹیسٹوں کے بعد ملزم آفتاب کے رویے نے سب کو حیران کر دیا ہے۔ ایف ایس ایل ذرائع کا کہنا ہے کہ اس نے دونوں ٹیسٹوں کے دوران ایک ہی جواب دیا۔ ایسا لگتا ہے جیسے یہ سب اس کے منصوبے کا حصہ تھا۔ اس نے نہ تو پولی گراف ٹیسٹ سے انکار کیا اور نہ ہی نارکو کے لیے۔ ماہرین کی بات پر یقین کیا جائے تو ایسا کم ہی دیکھا گیا ہے کہ کوئی مجرم قتل کے مقدمے میں بغیر کسی ہچکچاہٹ کے اتنا تعاون کرتا ہو۔

      آفتاب نے چائنیز چاقو سے کئے شردھا کی لاش کے ٹکڑے، جنگل میں پھینکا سر

      فحش فلمیں دیکھنے کی تھی لت، 5 کلاس میٹ نے دوست لڑکی کا کیا ریپ، ویڈیو بھی بنایا اور۔۔۔۔

      سوالوں کے گھیرے میں آفتاب کا رویہ
      ذرائع کی مانیں تو ملزم آفتاب کا طرز عمل سوالیہ نشان ہے۔ وہ ہر سوال کا ایک ہی جواب دے رہا ہے، یہ بھی پولیس کے لیے ایک پہیلی بنی ہوئی ہے۔ اب خیال کیا جا رہا ہے کہ آنے والے دنوں میں دہلی پولیس آفتاب کے دماغ کو پڑھنے کے لیے برین میپنگ بھی کروا سکتی ہے۔ تاہم پولیس کو ابھی ڈی این اے رپورٹ کا انتظار ہے۔ اس کے بعد ہی دوسرے ٹیسٹ پر غور کیا جائے گا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: