உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستانی سرحد میں پھر گھسا پاکستانی ڈرون، بی ایس ایف کے جوانوں نے داغی گولیاں، سرچ آپریشن جاری

    ہندوستانی سرحد میں پھر گھسا پاکستانی ڈرون، بی ایس ایف کے جوانوں نے داغی گولیاں

    ہندوستانی سرحد میں پھر گھسا پاکستانی ڈرون، بی ایس ایف کے جوانوں نے داغی گولیاں

    Pakistani drone entered Indian border again: مغربی راجستھان میں ہندوستان-پاکستان بارڈر (India-Pakistan International Border) پر سرحد پار سے ڈرون کے ذریعہ ڈرگس بھیجنے کا سلسلہ نہیں رک رہا ہے۔ ایک بار پھر پاکستانی اسمگلروں نے ناپاک حرکت کرتے ہوئے ہندوستانی سرحد میں ہیروئن کی ڈیلیور کی ہے۔ ڈرون کی اطلاع ملتے ہی بی ایس ایف کے جوانوں نے اس پر فائرنگ شروع کردی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      شری گنگا نگر: ہندوستان-پاکستان کی سرحد (India-Pakistan International Border) پر ڈرگس کی اسمگلنگ تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ ایک بار پھر سے سرحد پار پاکستان کی طرف سے آئے ایک ڈرون نے ہندوستانی سرحد میں ہیروئن کی کھیپ (Heroin consignment) پہنچائی ہے، لیکن اس دوران سرحد پر پاکستانی ڈرون کو دیکھ کر بی ایس ایف کے جوانوں نے اس پر فائرنگ کرکے اسے بھاگنے کو مجبور کردیا۔ تاہم اس پوری کارروائی کے دوران پاکستانی اسمگلر ہندوستانی سرحد میں ڈرگس پہنچانے میں کامیاب ہوگئے۔ سرحد پر یہ کوئی پہلا موقع نہیں ہے جب پاکستان کی طرف سے ڈرون سے نشیلی اشیا کی اسمگلنگ کی گئی ہے۔ اس سے پہلے بھی کئی بار ایسا ہوچکا ہے۔

      جانکاری کے مطابق، تازہ معاملہ شری گنگا نگر ضلع میں انوپ گڑھ علاقے میں پیش آیا۔ انوپ گڑھ کی کیلاش پوسٹ پر ہندوستان-پاکستان بین الاقوامی سرحد پر ہفتہ کے روز دیر رات ایک پاکستانی ڈرون نے ہندوستانی سرحد میں دراندازی کرلی۔ پاکستانی ڈرون کو دیکھ کر بارڈر پر تعینات بی ایس ایف کے جوانوں نے اپنی بندوقوں کے منہ کھول دیئے۔ بتایا جا رہا ہے کہ فائرنگ کے بعد ڈرون غائب ہوگیا۔ بعد میں چلائے گئے آپریشن میں بی ایس ایف کے جوانوں کو وہاں ایک پیکٹ میں ہیروئن برآمد ہوئی۔

      ہندوستان-پاکستان سرحدی علاقے میں سرچ آپریشن جاری

      بی ایس ایف کی طرف سے برآمد کئے گئے اس پیکٹ میں تقریباً ساڑھے تین کلو ہیروئن تھی۔ فائرنگ کے بعد ڈرون واپس پاکستان کی سرحد میں چلا گیا یا پھر تباہ ہوکر ہندوستانی سرحد میں گرا ہے۔ اس کا ابھی تک پوری طرح سے انکشاف نہیں ہوپایا ہے۔ ڈرون کی تلاش میں ہندوستان-پاکستان سرحدی علاقے میں سرچ آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ ہندوستانی سرحد میں ڈرون کی موجودگی سے بی ایس ایف کے جوان مزید الرٹ موڈ پر آگئے ہیں۔

      پاکستانی اسمگلروں سے ملے ہوئے ہندوستانی اسمگلر

      قابل ذکر ہے کہ ہندوستان-پاکستان کی سرحد پر پاکستانی اسمگلر گزشتہ کافی وقت سے ڈرگس کی ہندوستان میں اسمگلنگ کر رہے ہیں۔ ان کے اس کام میں سرحدی علاقے میں سرگرم ہندوستانی ڈرگس اسمگلر ان کی اسمگلنگ کرتے ہیں۔ مقامی اسمگلر ڈرون یا پھر دیگر طریقے سے ہندوستانی سرحد میں پھینکی گئی ہیروئن کو پنجاب پہنچاتے ہیں۔ اس کے عوض میں انہیں موٹی رقم دی جاتی ہے۔ بی ایس ایف اور مقامی پولیس ماضی میں ایسے اسمگلروں کو کوئی بار پکڑ چکی ہے، لیکن پھر بھی سرحد پار سے ڈرگس اسمگلر کا یہ سلسلہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: