ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ اسمبلی میں 1.74 لاکھ کروڑ روپے کا بجٹ پیش ، اقلیتوں کیلئے 2000 کروڑ روپے مختص

ایوان میں اپنے پانچویں بجٹ میں وزیرموصوف نے کہا کہ تخمینہ آمدنی 1,25,454کروڑ روپے ہے اور تخمینی مالیتی خسارہ 28,077کروڑ روپے ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 15, 2018 05:58 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
تلنگانہ اسمبلی میں 1.74 لاکھ کروڑ روپے کا بجٹ پیش ، اقلیتوں کیلئے 2000 کروڑ روپے مختص
تلنگانہ کے وزیر اعلیٰ کے چندرشیکھرراو: فائل فوٹو، پی ٹی آئی

حیدرآباد : تلنگانہ کے وزیر خزانہ ای راجندر نے ریاستی اسمبلی میں 1,74,553 کروڑ روپے کا سالانہ بجٹ پیش کیا۔ ایوان میں اپنے پانچویں بجٹ میں وزیرموصوف نے کہا کہ تخمینہ آمدنی 1,25,454کروڑ روپے ہے اور تخمینی مالیتی خسارہ 28,077کروڑ روپے ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی آمدنی 73,751کروڑ روپے ہے جبکہ مرکز کا حصہ 29,041کروڑ روپے ہے۔ تخمینی فاضل آمدنی 5520کروڑ روپے ہے ۔

وزیر موصوف نے کہا کہ ہر سال ریاست میں مجموعی گھریلو پیداوار میں اضافہ ہورہا ہے۔ انہوں نے مختلف شعبوں میں کئے گئے رقمی الاٹمنٹ کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ عوام کے مختلف طبقات کا احاطہ کرنے والی فلاحی اسکیمات اور آبپاشی کے شعبہ کو بجٹ میں اہمیت دی گئی ہے۔ آبپاشی شعبہ کے لئے 25ہزار کروڑ روپے کی رقم فراہم کی گئی ہے۔ تعلیم کے شعبہ کے لئے 10,830کروڑ روپے ‘ صحت کے 7335کروڑ اور اقلیتوں کے لئے 2000 کروڑ روپے الاٹ کئے گئے ہیں۔

ریاست کے ہر گھر کوپینے کے پانی کی فراہمی کی مشن بھاگیرتا اسکیم کے لئے 1081کروڑ روپے اور ریاستی بلدیات کے لئے 7251کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔انہو ں نے کہا کہ پنچایت راج شعبہ کے لئے 15,000کروڑ روپے سے زائد رقم مختص کی گئی ہے۔ شہری ترقی کے لئے 1000کروڑ روپے فراہم کئے گئے ہیں۔ بجلی کے شعبہ کے لئے 5650اور صنعتوں کے لئے 1286کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔ایس سیز کی ترقی کے لئے 16,463 کروڑ روپے ‘ ایس ٹیز کی ترقی کے لئے 8063کروڑ روپے ‘ بی سیز کے لئے 5920کروڑ روپے الاٹ کئے گئے ہیں۔

First published: Mar 15, 2018 05:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading