ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ کے وزیراعلی نے معذور مسلم ڈرائیور سے ذاتی مکان کا وعدہ پورا کیا

محمد سلیم دس سال پہلے ایک حادثہ میں معذور ہو گئے تھے اور وہ ایک طویل عرصہ سے اپنی معذوری کے سرٹیفکیٹ کے لئے کوشش کررہے تھے تاکہ ریاستی حکومت کی جانب سے دی جانے والی پنشن حاصل کی جائے۔ وزیراعلی کی گاڑیوں کا قافلہ اچانک رکنا اور وزیراعلی کا خود ان کے قریب آکر ان سے بات کرنا و ان کی خیریت دریافت کرنا ان کے لئے حیران کن بات تھی۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 29, 2020 02:29 PM IST
  • Share this:
تلنگانہ کے وزیراعلی نے معذور مسلم ڈرائیور سے ذاتی مکان کا وعدہ پورا کیا
وزیراعلی کے چندرشیکھرراو کے فرزند و وزیر بلدی نظم ونسق کے تارک راما راو نے سلیم کو اس مکان کی چابیاں حوالے کیں۔

حیدرآباد۔ تلنگانہ کے  وزیراعلی کے چندرشیکھرراو کی جانب سے معذور مسلم شخص سے کیا گیا وعدہ پورا ہوا۔ وہ جاریہ سال 27فروری کو حیدرآباد میں ایک نجی تقریب میں شرکت کے بعد اپنی سرکاری رہائش گاہ پرگتی بھون واپس ہورہے تھے۔ ان کی گاڑیوں کا قافلہ شہر کے علاقہ ٹولی چوکی سے گزر رہا تھا کہ اچانک وزیراعلی نے گاڑی روکنے کا اشارہ کیا اورگاڑی سے اترپڑے۔ انہوں نے سڑک پر جانے والے معذور شخص کے پاس پہنچ کر اس کی خیریت معلوم کی۔ اس موقع پر ان کے ساتھ موجود اسٹاف کو انہوں نے احکامات جاری کیے کہ معذور مسلم شخص کو پنشن اور ڈبل بیڈ روم مکان جاری کیا جائے۔چونکہ اس معذور شخص جس کی شناخت سلیم کے طور پر کی گئی ہے، کے پاس معذوری کا سرٹیفکیٹ تھا تو وزیراعلی کے ساتھ موجود ضلع کلکٹر نے اُسی ماہ سے ان کے لئے وظیفہ جاری کردیا۔


آٹھ ماہ بعد جاریہ ماہ کی 26تاریخ کو شہر کے ضیا گوڑہ علاقہ میں سلیم کو حکومت کی جانب سے غریبوں کیلئے ڈبل بیڈ روم مکان کی اسکیم کے تحت مکان فراہم کیا گیا۔ وزیراعلی کے چندرشیکھرراو کے فرزند و وزیر بلدی نظم ونسق کے تارک راما راو نے سلیم کو اس مکان کی چابیاں حوالے کیں۔ اس طرح سلیم سے وزیراعلی کا کیاگیا وعدہ 8ماہ میں پورا ہوا۔


حیدرآبادی شخص محمد سلیم وہ دن یاد کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ وہ سڑک پر کھڑے تھے اور وہاں سے وزیراعلی کا قافلہ گذر رہا تھا کہ اچانک یہ قافلہ رک گیا اور ان کے لئے حیرت کی انتہا اُس وقت رہی جب وزیراعلی نے اچانک ان کے قریب پہنچ کر ان سے خیریت دریافت کی۔ محمد سلیم دس سال پہلے ایک حادثہ میں معذور ہو گئے تھے اور وہ ایک طویل عرصہ سے اپنی معذوری کے سرٹیفکیٹ کے لئے کوشش کررہے تھے تاکہ ریاستی حکومت کی جانب سے دی جانے والی پنشن حاصل کی جائے۔ وزیراعلی کی گاڑیوں کا قافلہ اچانک رکنا اور وزیراعلی کا خود ان کے قریب آکر ان سے بات کرنا و ان کی خیریت دریافت کرنا ان کے لئے حیران کن بات تھی۔


وہ کہتے ہیں کہ یہ لمحہ ان کی زندگی کا ایک قیمتی لمحہ تھا جس کو وہ کبھی فراموش نہیں کرسکتے۔ انہوں نے اپنے حالات بتاتے ہوئے کہا کہ اپنے افراد خاندان کیلئے کھانے پینے کے انتظام کے علاوہ ان کے لئے سب سے بڑی آفت ہر ماہ گھر کا کرایہ ادا کرنا تھا جس کے وقت پر ادا نہ کرنے پرانھیں مالک مکان کی دھمکیوں کا سامنا کرنا پڑتا۔ سلیم نے اپنی پریشانیاں وزیراعلی کو بتائیں جس پر وزیراعلی نے بغیر ایک لمحہ گنوائے اپنے ساتھ کھڑی حیدرآباد کی کلکٹر شویتا موہنتی کو ان کے لئے پنشن اور مکان الاٹ کرنے کے احکامات جاری کئے۔

چونکہ محمد سلیم کے پاس معذوری کا سرٹیفکیٹ تھا کلکٹر نے فوری طور پر ان کیلئے اسی ماہ سے 3016 روپیے فی ماہ کا پنشن جاری کروا دیا اور حیدرآباد کے علاقہ ضیاء گوڈہ میں زیر تعمیر حکومت کے مکانات میں سے ایک مکان انھیں دینے کا وعدہ کیا گیا۔ 26 اکتوبر کو تلنگانہ کے وزیر بلدی نظم و نسق کے تا رک راما راؤ نے حکومت کی ڈبل بیڈ روم اسکیم کے تحت شہر حیدرآباد میں 1152 مکانات تقسیم کیے۔ ان میں محمد سلیم کو حاصل ہونے والا مکان بھی شامل تھا۔کے تارک راما راو نے محمد سلیم کو انکی گھر کی چا بیاں حوالے کیں۔ ایک اندازہ کے مطابق اس اسکیم کے تحت فراہم کردہ ایک ڈبل بیڈ روم فلیٹ کی بازار میں قیمت 40لاکھ روپئے ہے۔ اس طرح وظیفہ اور خود کا مکان ہونے کا سلیم کا خواب شرمندہ تعبیر ہوا جس پر وہ کافی خوش ہیں۔ سلیم نے اپنی زندگی میں ہوئی اس نئی تبدیلی کو نئی صبح سے تعبیر کیا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 29, 2020 02:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading