ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرنل سنتوش کی شہادت پر ماں نے کہا : میرے بیٹے نے مادر وطن کیلئے جان کا نذرانہ پیش کیا ، مجھے فخر ہے

کرنل سنتوش کی والدہ نے کہا کہ سنتوش میرا اکلوتا بیٹا تھا ، ایک ماں کی حیثیت سے مجھے کافی صدمہ پہنچا ہے ۔ لیکن میرے بیٹے نے اپنے مادر وطن کیلئے جان کا نذرانہ پیش کیا ، اس بات پر مجھے فخر ہے ۔

  • Share this:
کرنل سنتوش کی شہادت پر ماں نے کہا : میرے بیٹے نے مادر وطن کیلئے جان کا نذرانہ پیش کیا ، مجھے فخر ہے
ہندوستانی فوج ۔ فائل فوٹو ۔

پی وی رمنا کمار


ہندوستان اور چین سرحد پر مشرقی لداخ میں پچھلے ایک مہینے سے بھی زیادہ وقت سے چلے آرہے تعطل کے درمیان پیر کی رات دونوں ملکوں کے فوجیوں کے درمیان پیگانگ جھیل علاقے میں پرتشدد جھڑپ ہوئی جس میں ہندوستانی فوج کے ایک افسر اور دو جوان شہید ہوگئے۔ شہید جوانوں میں تلنگانہ کے سوریا پیٹ سے تعلق رکھنے والے کرنل سنتوش بھی شامل ہیں ۔


سنتوش تقریبا ڈیڑھ سال سے سرحد پر تھے ۔ ان کے پسماندگان میں ان کی اہلیہ سنتوشی ، نو سال کی بیٹی ابھینیا اور چار سال کا بیٹا انیرودھ ہے ۔ فوجی افسران نے کرنل سنتوش کے اہل خانہ کو یہ واقعہ پیش آنے کے بعد ان کی شہادت کی خبر دیدی تھی ۔


کرنل سنتوش کی شہادت سے ان کے اہل خانہ پر غموں کا پہاڑ ٹوٹ پڑا ہے ۔ ان کی چچی کی طبیعت خرات ہوگئی اور انہیں فورا اسپتال میں داخل کرنا پڑگیا ۔ وہیں ان کی والدہ منجولا بھی غموں سے کافی نڈھال ہیں ۔ تاہم انہوں نے اپنے آنسووں کو پوچھتے ہوئے بتایا کہ سنتوش میرا اکلوتا بیٹا تھا ، ایک ماں کی حیثیت سے مجھے کافی صدمہ پہنچا ہے ۔ لیکن میرے بیٹے نے اپنے مادر وطن کیلئے جان کا نذرانہ پیش کیا ، اس بات پر مجھے فخر ہے ۔ کرنل ستنوش کی ماں نے مزید کہا کہ فوج کے افسران نے شہادت کے بارے میں گزشتہ روز ان کی اہلیہ کو خبر دیدی تھی اور اس نے ہمیں آج یہ بات بتائی ۔

قابل ذکر ہے کہ ہے سنتوش نے کوروکونڈا سینک اسکول سے اپنی پڑھائی پوری کی تھی ۔ ان کے والد اپیندر اسٹیٹ بینک میں مینیجر کے عہدہ پر ریٹائرڈ ہوئے ہیں ۔ ستنوش نے 2004 میں فوج میں شمولیت اختیار کی تھی اور وہ جموں میں بھی اپنی خدمات دے چکے ہیں ۔

ستنوش کے ایک رشتہ دار نے بتایا کہ اس نے ایک آپریشن میں شرکت کی تھی اور تین پاکستانی دراندازوں کو مار گرایا تھا ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ سنتوش کا حیدرآباد ٹرانسفر ہوگیا تھا ، لیکن ہندوستان اور چین سرحد پر کشیدگی اور کورونا کی وجہ سے انہیں واپس بلا لیا گیا تھا ۔
First published: Jun 16, 2020 08:09 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading