ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ اسمبلی انتخابات 2018 : زائد از 40 مراکز پر ووٹوں کی گنتی جاری

مختلف جماعتوں کے تقریباً 1,821 امیدواروں نے اسمبلی انتخابات میں حصہ لیا تھا

  • UNI
  • Last Updated: Dec 11, 2018 08:47 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
تلنگانہ اسمبلی انتخابات 2018 : زائد از 40 مراکز پر ووٹوں کی گنتی جاری
فائل فوٹو

 تلنگانہ اسمبلی انتخابات کے نتائج کے لئے ووٹوں کی گنتی شرو ع ہوگئی ہے ۔ رائے شمار ی کا آغاز صبح آٹھ بجے سے ہوا۔ مختلف جماعتوں کے تقریباً 1,821 امیدواروں نے اسمبلی انتخابات میں حصہ لیا تھا۔ رائے شماری کے اسٹاف اور 14+1 بینچس رائے شماری کے لئے رکھے گئے ہیں۔


رنگاریڈی ضلع میں ضلعی حکام نے 2 رائے شماری کے مراکز قائم کئے ہیں۔ متحدہ ضلع کھمم میں تمام مراکز میں ووٹوں کی گنتی ہور ہی ہے۔ ہر حلقہ کے لئے ریٹرننگ آفیسر کو ایک ٹیبل کے ساتھ 14 ٹیبلس کا انتظام کیا گیا ہے۔ متحدہ ضلع رنگاریڈی کے ابراہیم پٹنم، ایل بی نگر، مہیشورم، شادنگر، راجندر نگر، سیری لنگم پلی، چیوڑلہ اور کلواکرتی کے لئے ووٹوں کی گنتی پالم کولا گریجن ویلفیر ڈگری کالج میں ہورہی ہے۔ میڑچل۔ ملکاجگری ضلع کے ووٹوں کی گنتی کیسرا منڈل کے بوگارم میں ہورہی ہے جبکہ وقارآباد میں ووٹوں کی گنتی اگریکلچر مارکٹ کمیٹی میں ہورہی ہے۔


ریاست کے زائد از 40 مراکز پر ووٹوں کی گنتی ہورہی ہے۔ ریاست میں بحیثیت مجموعی زائد از 73 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی گئی جہاں 2.8 کروڑ ووٹرس نے اپنے حق رائے دہی سے استفادہ کیا۔ نتائج کے راست ٹیلی کاسٹ کیلئے تمام ٹی وی چینلوں نے بھی انتظامات کئے ہیں ۔ پولیس نے اسٹرانگ رومس کے اطراف و اکناف سخت ترین انتظامات کئے ہیں جہاں الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو محفوظ رکھا گیا ہے۔

First published: Dec 11, 2018 08:47 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading