உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہولی، Juma And Shab-E-Barat ایک ساتھ، لکھنؤ کی 22 مسجدوں میں تبدیل ہوا جمعے کی نماز کا وقت، ایڈوائزری جاری

    Juma And Shab-E-Bara ،Holi :  رپورٹ کے مطابق مولانا راشد فرنگی محلی نے تمام مساجد کو ایڈوائزری جاری کی ہے۔ عام طور پر نماز جمعہ اور خطبہ دوپہر ساڑھے 12 بجے پڑھا جاتا ہے لیکن اس بار ہولی کی وجہ سے زیادہ تر مساجد میں نماز ڈیڑھ بجے کے بعد پڑھی جائے گی۔

    Juma And Shab-E-Bara ،Holi : رپورٹ کے مطابق مولانا راشد فرنگی محلی نے تمام مساجد کو ایڈوائزری جاری کی ہے۔ عام طور پر نماز جمعہ اور خطبہ دوپہر ساڑھے 12 بجے پڑھا جاتا ہے لیکن اس بار ہولی کی وجہ سے زیادہ تر مساجد میں نماز ڈیڑھ بجے کے بعد پڑھی جائے گی۔

    Juma And Shab-E-Bara ،Holi : رپورٹ کے مطابق مولانا راشد فرنگی محلی نے تمام مساجد کو ایڈوائزری جاری کی ہے۔ عام طور پر نماز جمعہ اور خطبہ دوپہر ساڑھے 12 بجے پڑھا جاتا ہے لیکن اس بار ہولی کی وجہ سے زیادہ تر مساجد میں نماز ڈیڑھ بجے کے بعد پڑھی جائے گی۔

    • Share this:
      لکھنؤ۔ اس بار ہولی(Holi)، جمعہ اور شب برات (Juma And Shab-E-Barat) ایک ہی دن ہیں۔ ایسے میں موقع کی نزاکت کو دیکھتے ہوئے لکھنؤ کی 22 مساجد میں جمعہ کی نماز (Jumma Prayer) دیر سے پڑھی جائے گی۔ اس کے لیے اسلامک سینٹر آف انڈیا کے سنی مولانا خالد رشید فرنگی محلی نے مسلمانوں کے لیے ایک ایڈوائزری جاری کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ عام طور پر نماز جمعہ اور خطبہ دوپہر ساڑھے 12 بجے پڑھا جاتا ہے لیکن اس بار ہولی کی وجہ سے زیادہ تر مساجد میں نماز ڈیڑھ بجے کے بعد پڑھی جائے گی۔ ساتھ ہی مسلمانوں کو ہوشیار رہنے کی تلقین کرتے ہوئے انہیں صرف اپنے پڑوس کی مساجد میں جمعہ کی نماز ادا کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

      معلومات کے مطابق، اسلامک سینٹر آف انڈیا (آئی سی آئی) کی تجویز کے بعد ہولی کے دن جمعہ کی نماز کے وقت میں تبدیلی کی گئی ہے۔ یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ لکھنؤ کی جن 22 مساجد میں نماز جمعہ کے اوقات میں تبدیلی کی گئی ہے، ان میں عیش باغ عیدگاہ کی جامع مسجد، اکبری گیٹ پر واقع ایک مینار مسجد اور مسجد چوک میں واقع مسجد شاہمینہ شاہ سمیت دیگر مذہبی مقامات شامل ہیں۔ ان مساجد میں نماز جمعہ ڈیڑھ بجے ادا کی جائے گی۔ اس کے ساتھ ہی عیدگاہ میں واقع جامع مسجد میں دو بجے نماز ادا کی جائے گی۔ اسی طرح مسجد شاہمینہ شاہ میں نماز جمعہ 1:00 کی بجائے 1:30 بجے ادا کی جائے گی۔
      یہ بھی پڑھیں: ایک 17سالہ نوجوان اپنے گھر سے لاپتہ، لخت جگر کیلئے ماں نے کی یہ اپیل، میرے بچے کو معاف کردیں اور اسے چھوڑ دیا جائے

      ’ہندوستان‘ میں شائع رپورٹ کے مطابق مولانا راشد فرنگی محلی نے تمام مساجد کو ایڈوائزری جاری کی ہے۔ اس ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ ہولی کے دن کسی بھی ناخوشگوار واقعے کو روکنے اور امن برقرار رکھنے کے لیے نماز جمعہ کے اوقات میں تبدیلی کی گئی ہے۔ ایڈوائزری میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہولی کے دن مسلمان دور دراز کی مسجد میں نماز پڑھنے کے بجائے اپنے گھر کے قریب کی مسجد میں نماز پڑھیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: