ہوم » نیوز » وطن نامہ

وزیر اعظم مودی کے ان اقدامات سے اقلیتوں میں ان کے تئیں بڑھا اعتماد

تین دن میں وزیر اعظم مودی کے ذریعہ کئے گئے یہ دو کام اقلیتوں خاص طور پر مسلمانوں میں اعتماد پیدا کرنے کی ایک کڑی ہے ۔

  • Share this:
وزیر اعظم مودی کے ان اقدامات سے اقلیتوں میں ان کے تئیں بڑھا اعتماد
وزیر اعظم مودی ہنرہاٹ کے دورہ کے دوران ۔ تصویر : پی ٹی آئی

وزیر اعظم نریندر مودی کے ہنر ہاٹ میں جانے اور لٹی چوکھا کھانے کو بہار کی انتخابی جنگ کے آغاز سے جوڑا جارہا ہے ، لیکن حقیقت یہ ہے کہ وزیر اعظم مودی نے ہنر ہاٹ جاکر ایک تیر سے کئی نشانے لگائے ۔ ہنر ہاٹ کا انعقاد اقلیتی امور کی وزارت کی جانب سے کیا گیا ہے اور اس میں لگنے والے زیادہ تر اسٹال اقلیتی کمیونٹی کے لوگوں کے ہیں ۔ دراصل وزیر اعظم مودی نے ہنر ہاٹ کا دورہ کرکے ایک تیر سے کئی نشانے سادھے ہیں ۔ ملک میں جاری سی اے اے کی مخالفت کو کم کرنے اور اقلیتوں میں اعتماد پیدا کرنے کو لے کر وزیر اعظم مودی کا یہ ایک بڑا قدم ہے ۔ وزیر اعظم مودی کے ہنر ہاٹ دورہ کے دوران اور اس کے بعد وہاں کے ہاکروں اور لوگوں کے رد عمل سے بھی اس کو سمجھا جاسکتا ہے ۔


وزیر اعظم مودی کے ہنر ہاٹ کے دورہ کے دو دن بعد عرس کیلئے چادر بھیجنے کو بھی اسی کڑی میں دیکھا جارہا ہے ۔ حالانکہ روایت کے تحت ہی وزیر اعظم مودی نے اجمیر کی درگاہ کیلئے چادر اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کو سونپی ہے ، لیکن اس کا وقت بھی اپنے آپ میں کافی اہمیت کا حامل ہے ۔ ویسے یہ چھٹویں مرتبہ ہے جب وزیر اعظم مودی نے خواجہ اجمیری کی درگاہ کیلئے چادر بھیجی ہے ، لیکن اس کے ساتھ ہی انہوں نے ایک نئے طریقہ کی بھی شروعات کی ، جس کے تحت وزیر اعظم مودی نے اقلیتی امور کے وزیر کو چادر سونپنے کے وقت مسلم طبقہ کے لوگوں سے ملاقات کی اور ملک کی ترقی کیلئے دعا بھی مانگی ۔


وزیر اعظم نریندر مودی نے خواجہ اجمیری کی درگاہ کیلئے چادر روانہ کی ۔ تصویر : یو این آئی ۔
وزیر اعظم نریندر مودی نے خواجہ اجمیری کی درگاہ کیلئے چادر روانہ کی ۔ تصویر : یو این آئی ۔


تین دن میں وزیر اعظم مودی کے ذریعہ کئے گئے یہ دو کام اقلیتوں خاص طور پر مسلمانوں میں اعتماد پیدا کرنے کی ایک کڑی ہے ۔ سرکار کے ایک وزیر کا بھی کہنا ہے کہ وزیر اعظم مودی کے اس عمل سے اقلیتوں میں ان کے تئیں اعتماد بڑھے گا ۔ ساتھ ہی سی اے اے اور شاہین باغ میں ہورہے احتجاج میں بھی کمی آئے گی ۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ شاہین باغ میں کئی راستے کھلنے کے قواعد کو بھی اس سے سمجھا جاسکتا ہے ۔

ونیت کمار
First published: Feb 21, 2020 10:11 PM IST