اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ائیرہوسٹس سے چھیڑ چھاڑ کے الزام میں ہندو مہاسبھا کا ایک سینئر لیڈر گرفتار

    كوئمبٹور : چنئی جا رہے ایک ہوائی جہاز کے پرواز سے پہلے عملے کے ارکان کے ساتھ مبینہ زیادتی کے معاملے میں ہندو مہاسبھا کے ایک سینئر لیڈر کے علاوہ دو دیگر افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

    كوئمبٹور : چنئی جا رہے ایک ہوائی جہاز کے پرواز سے پہلے عملے کے ارکان کے ساتھ مبینہ زیادتی کے معاملے میں ہندو مہاسبھا کے ایک سینئر لیڈر کے علاوہ دو دیگر افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

    كوئمبٹور : چنئی جا رہے ایک ہوائی جہاز کے پرواز سے پہلے عملے کے ارکان کے ساتھ مبینہ زیادتی کے معاملے میں ہندو مہاسبھا کے ایک سینئر لیڈر کے علاوہ دو دیگر افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

    • PTI
    • Last Updated :
    • Share this:

      كوئمبٹور : چنئی جا رہے ایک ہوائی جہاز کے پرواز سے پہلے عملے کے ارکان کے ساتھ مبینہ زیادتی کے معاملے میں ہندو مہاسبھا کے ایک سینئر لیڈر کے علاوہ دو دیگر افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ دو دیگر ملزمین وکیل ہیں اور وہ مبینہ طور پر نشے کی حالت میں تھے۔


      پولیس نے بتایا کہ سینتل کمار،راجا اور تمل ناڈو یونٹ کے آل انڈیا ہندو مہاسبھا کے نائب صدر سبھاش سوامی ناتھن کو آج 14 دنوں کی عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا۔ وہ کل رات دس بجے انڈگو کے طیارے میں سوار ہوئے۔


      بتایا جاتا ہے کہ یہ تنازع اس وقت شروع ہوا ، جب جہاز کے پرواز بھرنے سے پہلے تینوں میں سے ایک وکیل نے مبینہ طور پر ایک ایئر ہوسٹس کی اپنے موبائل سے تصویر لے لی، جس پر اس نے اعتراض کیا۔ طیارہ میں موجود دیگر مسافروں نے بھی اس کی مخالفت کی اور بعد میں پائلٹ نے مداخلت کی اور ملزمین کو مناسب طریقے سے پیش آنے کو کہا۔


      انہوں نے بتایا کہ تکرار کے بعد مسافروں نے دھمکی دی کہ اگر وکیل طیارے سے نہیں اترتے ہیں تو انہیں اتار دیا جائے گا۔ بعد میں اس معاملے کی اطلاع ہوائی اڈے کے حکام کو دی گئی، جس نے پولیس کو اطلاع دی۔ سی آئی ایس ایف کے اہلکاروں نے تینوں کو گرفتار کر لیا۔


      آج صبح ان تینوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی۔ انہیں آج جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا ، جہاں سے انہیں 14 دن کی عدالتی حراست میں بھیج دیا۔

      First published: