உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹیپوسلطان ایک محب وطن اور سیکولر حکمراں تھے : سدا رمیا

    بنگلورو:کرناٹک بھر میں مجاہدآزادی ٹیپوسلطان کا 10 نومبرکو یوم پیدائش منایا گیا۔ اس موقع پر ایک جانب جشن دیکھاگیا تودوسری طرف احتجاج اور مخالفت۔ ریاست کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سرکاری سطح پر شیر میسورکا یوم پیدائش منایا گیا ۔

    بنگلورو:کرناٹک بھر میں مجاہدآزادی ٹیپوسلطان کا 10 نومبرکو یوم پیدائش منایا گیا۔ اس موقع پر ایک جانب جشن دیکھاگیا تودوسری طرف احتجاج اور مخالفت۔ ریاست کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سرکاری سطح پر شیر میسورکا یوم پیدائش منایا گیا ۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      جمال برنی ، ای ٹی وی


      بنگلورو:کرناٹک بھر میں مجاہدآزادی ٹیپوسلطان کا 10 نومبرکو یوم پیدائش منایا گیا۔ اس موقع پر ایک جانب جشن دیکھاگیا تودوسری طرف احتجاج اور مخالفت۔ ریاست کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سرکاری سطح پر شیر میسورکا یوم پیدائش منایا گیا ۔ تاہم اس تقریب کا جے پی نے بائیکاٹ کیا۔ ادھر سنگھ پریوار کی بعض تنظیموں نےسڑکوں پر اتر کراحتجاج کیا۔


      مجاہدآزادی ٹیپوسلطان کا265واں یوم پیدائش انتہائی جوش وخروش کے ساتھ منایاگیا۔ محکمہ اقلیتی بہبود کے تحت بنگلورو کے ودھان سودھا میں مرکزی تقریب منعقد ہوئی ۔ بڑی تعداد میں ٹیپوسلطان کے شیدائیوں نے شرکت کی۔


      اس موقع پروزیراعلی سدرامیانے کہاکہ فرقہ پرست عناصرکی مخالفت کے باوجود حکومت نے سرکاری سطح پر ٹیپوسلطان کایوم پیدائش منانے کا فیصلہ کیا۔وزیراعلی نے کہاکہ ٹیپوسلطان ایک محب وطن اورسیکولرحکمراں تھے۔ایک دوسرے کے مذاہب کو برداشت نہیں کرنے والے ہی ان کی مخالفت کرر ہے ہیں۔


      کرناٹک کے وزیراقلیتی بہبود قمرالاسلام نے کہاکہ ٹیپوسلطان نے اپنے وطن کی خاطر اپنے دوبچوں کو گروی رکھا۔تاریخ میں ایسی مثال کہیں نہیں ملتی۔


      دریں اثنا گلبرگہ میں ٹیپو جینتی کے موقع پر طلبہ کی ایک ریلی نکالی گئی۔ ریلی میں مختلف اسکولوں کے طلبا کا جوش و خروش قابل دید تھا۔ طلبہ ٹیپو سلطان زندہ باد کے نعرے لگار ہے تھے۔ جگہ جگہ پر عوام نے ریلی کا خیر مقدم کیا۔


      شہر کے نگریشور اسکول سے رنگ مندر تک ریلی نکالی گئی۔رنگ مندر میں سرکاری تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ میئر گلبرگہ بھیم ریڈی تقریب کے مہمان خصوصی تھے۔ ریلی کو پرا من بنانے کیلئے پولیس کی جانب سے سیکورٹی کے وسیع تر انتظامات کئے گئے تھے۔


      یوں تو تمام سرکاری جلوس میں ضلع انتظامیہ موجود رہتا ہے لیکن ٹیپو جینتی کی ریلی میں ضلع انتظامیہ کا کوئی بھی بڑا افسر موجود نہیں تھا۔ ضلع انتظامیہ کے اعلیٰ افسران جلوس سے غیر حاضری کے ضمن میں کچھ بھی بولنے سے گریز کر رہے ہیں۔


      ادھر رائچور شہر میں بھی نہایت ہی جوش وخروش سے ٹیپو سلطان کی یوم پیدائش منائی گئی۔ شہر کے رنگ مندر میں منعقدہ خصوصی پروگرام میں رکن اسمبلی ڈاکٹر شیو راج پاٹل ،ضلع کلکٹر سسی کانت سنتھل ،سابق رکن اسمبلی سید یاسین ،کانگریس کے لیڈر بشیر الدین، مولانا حافظ محمد عبدالشکور کے علاوہ دیگر لیڈروں نے شرکت کی۔


      عوامی نمائندوں اور دانشوروں نے اس موقع پر نے کہا کہ ملک کی آزادی میں ٹیپو سلطان کا اہم رول رہا ہے اور ان کی قربانیوں کو فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ ٹیپو سلطان ایک سچے مسلمان تھے اور وہ سبھی مذاہت کا احترام کرتے تھے۔


      ڈرامہ نگارگریش کارناڈ نے اس موقع پر کہا کہ ممبئی کے ائیرپورٹ کو شیواجی مہاراج کانام دیاگیاہے ، لیکن کرناٹک میں ہم نے کیمپوے گوڈا کانام دیا ہے۔ کیمپے گوڈا بنگلورو کے بانی تھے ، لیکن مجاہدآزادی نہیں تھے۔حقیقت میں بنگلورو کے ائیرپورٹ کو ٹیپوسلطان کا نام دیاجاناچاہئے تھا۔


      ادھر دائیں بازو کی تنظیمیں کرناڈ کے بیان کو قوم مخالف قرار دے رہی ہیں۔ سری رام سینا کے گلبرگہ یونٹ کے صدراشوک کا کہنا ہے کہ کرناڈ جیسے مصنفین کانگریس کی بی ٹیم کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ ان میں اگر حب الوطنی کا جذبہ ہوتا تو اس طرح کی باتیں نہیں کرتے تھے۔ تاریخ بتاتی ہے کہ بنگلورو کو کیمپے گوڈا نے ہی بسایا تھا۔ ایسے لوگ جو ایوارڈ واپس کر رہے ہیں ، سرکار کو چاہئے کہ ان سے ایوارڈ چھین لیے جائیں ۔


      ٹیپو جینتی کی سرکاری تقریب کی بی جے پی نے ریاست گیر سطح پر بائیکاٹ کیا ۔ بی جے پی نے اس ضمن میں اپنے تمام منتخبہ نمائندوں کو ہدایت جاری کرتے ہوئے ٹیپو جنیتی کی سرکاری تقاریب سے دور رہنے کا مشورہ دیا تھا۔ دوسری جانب کانگریس لیڈران بی جے پی کے اس اقدام کو نفرت کی سیاست سے تعبیر کر رہے ہیں۔

      First published: