உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امام کونسل آف انڈیا نے وی ایچ پی کے ٹیپو سلطان پر عائد الزامات کو مسترد کیا

    گلبرگہ۔ امام کونسل آف انڈیا نے وی ایچ پی کے ٹیپو سلطان پر عائد الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔

    گلبرگہ۔ امام کونسل آف انڈیا نے وی ایچ پی کے ٹیپو سلطان پر عائد الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔

    گلبرگہ۔ امام کونسل آف انڈیا نے وی ایچ پی کے ٹیپو سلطان پر عائد الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      گلبرگہ۔ امام کونسل آف انڈیا نے وی ایچ پی کے ٹیپو سلطان پر عائد الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔ امام کونسل آف انڈیا کا کہنا ہے کہ مذہبی رواداری کی جو مثال ٹیپو سلطان کے دور میں ملتی تھی اسکی نظیر آج  بھی ملنی مشکل ہے۔


      وی ایچ پی  کے سائوتھ زون کے آرگنائزنگ سیکریٹری گوپا ل جی نے الزام عائد کیا تھا کہ ٹیپو کے دورحکومت میں آٹھ سو سے زائد منادر توڑے گئے اور کئی لوگوں کو بزور طاقت مسلمان بنایا گیا۔ اس پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے امام کونسل آف انڈیا کے کرناٹک کے جنرل سکریٹری مولانا  عتیق الرحمٰن نے بتایا کہ تاریخی کتابوں میں یہ بات درج ہے کہ ٹیپو سلطان کے شاہی خزانے سے مندروں کو سالانہ ایک لاکھ 93 ہزار پگوڈے کی امداد کی جاتی تھی۔ امام کونسل  کے لیڈران کا کہنا ہے کہ تاریخی کتابوں سے یہ بات  بھی ثابت ہے کہ  سرنگیری کی  مندر کو مراٹھوں نے لوٹا تھا تو ٹیپو نے  اپنے سرکاری خزانے سے10 کلو سو نے سے مندر کی مورتی بنائی۔


      وہیں نندن گڑھ کے گاؤں کلالا، بیل کوٹ کا نارائن مندر، کنیشور مندر، رنگناتھ مندر کی ٹیپو نے کا فی مالی امداد کی، وہیں جب وہ کانجی ورم میں 1791میں گئے تو وہاں ایک ادھورے مندر کی تعمیر کو مکمل کرنے کے لئے 10 ہزار کی رقم دی۔

      First published: