உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چین - پاکستان پر فوج کے اعلیٰ افسران کی بڑی میٹنگ، حکمت عملی پر ہوگا تبادلہ خیال

    چین - پاکستان پر فوج کے اعلیٰ افسران کی بڑی میٹنگ، حکمت عملی پر ہوگا تبادلہ خیال

    چین - پاکستان پر فوج کے اعلیٰ افسران کی بڑی میٹنگ، حکمت عملی پر ہوگا تبادلہ خیال

    چین اور پاکستان (China-Pakistan) کے ساتھ متصل سرحدوں پر بڑھتی سرگرمیوں کے درمیان ہندوستانی فوج کے اعلیٰ افسران (Indian Army Top Officers) پیر کو ہائی لیول میٹنگ (High Level Meeting) کرنے والے ہیں۔ اس میٹنگ میں چین - پاکستان کی بڑھتی سرگرمیوں سے مقابلہ کرنے کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: چین اور پاکستان (China-Pakistan) کے ساتھ متصل سرحدوں پر بڑھتی سرگرمیوں کے درمیان ہندوستانی فوج کے اعلیٰ افسران (Indian Army Top Officers) پیر کو ہائی لیول میٹنگ (High Level Meeting) کرنے والے ہیں۔ اس میٹنگ میں چین - پاکستان کی بڑھتی سرگرمیوں سے مقابلہ کرنے کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ گزشتہ کچھ وقت میں پاکستان کی طرف سے حقیقی کنٹرول لائن پر سیز فائر کی خلاف ورزی کے معاملے سامنے آئے ہیں۔ ساتھ ہی پاکستان دراندازی کی کوشش مسلسل کر رہا ہے۔ وہیں چین کی طرف سے مشرقی سرحدوں پر فوجیوں کی تعینات کی جارہی ہے۔

      نیوز ایجنسی اے این آئی نے ذرائع کے حوالے سے خبر دی ہے کہ آرمی کمانڈروں کی میٹنگ میں چین کے ساتھ متصل شمالی سرحد کے حالات اور مغربی سرحد پر دہشت گردوں کی حمایت میں پاکستانی کارروائی پر تبادلہ خیال کیا جاسکتا ہے۔ اس میٹنگ میں پنجاب اور اس سے متصل علاقوں میں پاک آرمی آئی ایس آئی کی سرگرمیوں پر بھی تبادلہ خیال کیا جاسکتا ہے۔

      ہندوستان نے چین کے ساتھ تنازعہ میں اختیار کیا تھا بے حد سخت رخ

      ہندوستانی فوج نے گزشتہ سال مشرقی لداخ میں چینی دراندازی کے خلاف جارحانہ رخ اختیار کیا تھا۔ ہندوستان نے اس سرحد پر بڑی تعداد میں فوجی تعینات کردیئے تھے۔ جون 2020 میں گلوان وادی کے حادثہ کے بعد ہندوستان نے بے حد سخت رخ اپنایا تھا۔ اسی ضمن میں اروناچل پردیش میں ہندوستانی فوج نے اپنی پہلی ایوی ایشن بریگیڈ کا قیام کردیا ہے۔ اس ایوی ایشن بریگیڈ کا کام صرف فارورڈ بیس پر فوجی سازوسامان پہنچانا اور بچاو کاموں تک ہی محدود نہیں ہے بلکہ یہ بریگیڈ حقیقی کنٹرول لائن (ایل اے سی) کے ایئر اسپیس کی نگرانی بھی کرتی ہے۔ ساتھ ہی یہ چین کے ایئر اسپیس پر بھی گہری نظر رکھتی ہے۔

      اروناچل میں کی ہے توپوں کی تعیناتی

      اس کے علاوہ فوج نے چین سے متصل حقیقی کنٹرول لائن کے پیشگی علاقوں میں بوفورس توپوں کی بھی تعیناتی کی ہے۔ حقیقی کنٹرول لائن پر چین کے ساتھ چل رہے تنازعہ کے درمیان اسے ہندوستان کی طرف سے بڑا قدم مانا جا رہا ہے۔

      ٹارگیٹ کلنگ میں پاک حامی دہشت گرد تنظیموں کا ہاتھ

      وہیں اگر پاکستانی سرحد کی طرف دیکھیں تو گزشتہ کچھ وقت میں اس فرنٹ پر سرگرمیاں تیز ہوئی ہیں۔ کشمیر میں مسلسل جاری ٹارگیٹ کلنگ کے پیچھے بھی پاکستان حامی دہشت گرد تنظیموں کا ہاتھ ہونے کی بات سامنے آئی ہے۔ کہا گیا ہے کہ دہشت گرد تنظیم کشمیر میں اپنے فرنٹل تنظیموں کے ذریعہ ٹارگیٹ کلنگ کروا رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: