உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia - Ukraine War: بین الاقوامی عدالتِ انصاف جلد کرے گا روس۔یوکرین جنگ سے متعلق فیصلہ، پوری دنیا منتظر

    روس کے خلاف یوکرین نے کھٹکھٹایا ICJ کا دروازہ ، حملے کو بتایا 'قتل عام' ۔ فائل فوٹو ۔

    روس کے خلاف یوکرین نے کھٹکھٹایا ICJ کا دروازہ ، حملے کو بتایا 'قتل عام' ۔ فائل فوٹو ۔

    روس کی جانب سے اقوام متحدہ کی اعلیٰ عدالت میں ہونے والی کارروائی کے بائیکاٹ کے بعد، یہ ابھی واضح نہیں ہے کہ ICJ کے فیصلے کا یوکرین کی سرزمین پر روسی سرگرمیوں پر کتنا اثر پڑے گا۔ گزشتہ ماہ یوکرین نے اقوام متحدہ کے درمیان تنازعات کے لیے دی ہیگ میں اقوام متحدہ کی اعلیٰ ترین عدالت میں روس کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا۔ یوکرین نے دی ہیگ میں ایک اور عدالت کو بھی شامل کرنے کی کوشش کی، بین الاقوامی فوجداری عدالت (آئی سی سی)، جو جنگی جرائم کو ہینڈل کرتی ہے۔

    • Share this:
      بین الاقوامی عدالت انصاف (International Court of Justice) نے ممکنہ طور پر یوکرین کی شکایت سے متعلق کیس پر فیصلہ سنائے گی جس میں روس نے یوکرین پر نسل کشی کا جھوٹا الزام لگا کر اپنے حملے کا جواز پیش کیا تھا۔ عدالت نے آخری بار 7 مارچ 2022 کو کیس کی سماعت کی۔ تاہم روس نے اس سماعت کا بائیکاٹ کیا تھا۔ اپنی شکایت میں یوکرین نے عدالت سے کہا تھا کہ وہ روس کو اپنے علاقوں میں تمام فوجی سرگرمیاں بند کرنے کا حکم دے۔

      یوکرین نے عدالت میں استدعا کی کہ روس ایک بین الاقوامی کنونشن کے تحت یوکرین پر روس نواز علیحدگی پسندوں کے زیر قبضہ علاقوں میں نسل کشی کا جھوٹا الزام لگا کر اپنی جنگ کا جواز پیش کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ علاقے زیادہ تر یوکرین کی مغربی سرحدوں کے ساتھ ہیں۔

      روس نے اس سے قبل ڈونیٹسک اور لوہانسک علاقوں آزاد اداروں کے طور پر تسلیم کیا تھا۔ جو یوکرین کے روس نواز علیحدگی پسند علاقے ہیں۔ یوکرین کی وزارت خارجہ نے کہا کہ اقوام متحدہ کی بین الاقوامی عدالت انصاف کو فوری طور پر روس کو یوکرین میں جنگ ختم کرنے کا حکم دینا چاہیے۔

      مزید پڑھیں: Russia - Ukraine War: یوکرین میں تنازعہ کو روکنے ثالثی کی کوششیں تیزتر، اقوام متحدہ ہندوستان کےساتھ رابطے میں

      روس کی جانب سے اقوام متحدہ کی اعلیٰ عدالت میں ہونے والی کارروائی کے بائیکاٹ کے بعد یہ ابھی واضح نہیں ہے کہ ICJ کے فیصلے کا یوکرین کی سرزمین پر روسی سرگرمیوں پر کتنا اثر پڑے گا۔ گزشتہ ماہ یوکرین نے اقوام متحدہ کے درمیان تنازعات کے لیے دی ہیگ میں اقوام متحدہ کی اعلیٰ ترین عدالت میں روس کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا۔

      مزید پڑھیں: Social Media: جمہوریت کوہیک کرنےسوشل میڈیاکاہورہاہےغلط استعمال، کانگریس صدرسونیا گاندھی کی ’گرجدار‘ تقریر



      یوکرین نے دی ہیگ میں ایک اور عدالت کو بھی شامل کرنے کی کوشش کی، بین الاقوامی فوجداری عدالت (آئی سی سی) جو جنگی جرائم کو ہینڈل کرتی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: