ہوم » نیوز » وطن نامہ

شوہر نے بیوی کی سہلیوں کو فرضی فیس بک سے بھیجیں بیوی کی پرائیویٹ ویڈیو، ایسے کھلا راز تو اڑ گئے ہوش

پروفیسر شوہر خاتون بن کر سوشل پر اپنی بیوی کی سہلیوں سے فحش باتیں کرنے لگا۔ اتنا ہی نہیں پروفیسر شوہر نے اپنی بیوی کے کئی فحش ویڈیو بھی بنائے اور ان کو بھی بھیجا۔

  • Share this:
شوہر نے بیوی کی سہلیوں کو فرضی فیس بک سے بھیجیں بیوی کی پرائیویٹ ویڈیو، ایسے کھلا راز تو اڑ گئے ہوش
پروفیسر شوہر خاتون بن کر سوشل پر اپنی بیوی کی سہلیوں سے فحش باتیں کرنے لگا۔ اتنا ہی نہیں پروفیسر شوہر نے اپنی بیوی کے کئی فحش ویڈیو بھی بنائے اور ان کو بھی بھیجا۔

شوہر اور بیوی کا رشتہ محض یقین پر ٹکا ہوتا ہے لیکن اس رشتے میں شک ہو جائے تو رشتے چلنا مشکل ہو جاتا ہے۔ یوپی کے آگرہ میں شوہر۔بیوی کے بیچ شک ہونے پر کچھ عجیب و غریب معاملہ سامنے آیا ہے۔ پروفیسر شوہر کو اپنی پروفیسر بیوی پر شک تھا تو اس نے ایک خاتون کے نام سے فرضی فیس بک آئی ڈی بنا لی۔ فرضی فیس بک آئی ڈی کے ذریعے پروفیسر شوہر نے اپنی پروفیسر کی بیوی کی سہلیوں سے دوستی کرلی۔


پروفیسر شوہر خاتون بن کر سوشل پر اپنی بیوی کی سہلیوں سے فحش باتیں کرنے لگا۔ اتنا ہی نہیں پروفیسر شوہر نے اپنی بیوی کے کئی فحش ویڈیو بھی بنائے اور ان کو بھی بھیجا۔ فرضی خاتون فیس بک کے ذڑیعے پروفیسر اپنی بیوی نظر رکھتا تھا کہ آخر اس کا جانا کہاں۔کہاں پر اور وہ کس سے بات کرتی ہے۔  دھیرے ۔ دھیرے شک زیادہ بڑھ گیا تو پروفیسر نے اہنی بیوی کے ساتھ مار پیٹ اور گھریلو تشدد شروع کر دیا۔ پروفیسر شوہر کے ظلم کے خلاف پروفیسر بیوی نے آگرہ مہیلا تھانے میں 10 اکتوبر 2020  کو کیس درج کروا دیا۔


پولیس نے اس معاملے میں کارروائی کی اور پروفیسر شوہر کا موبائل بھی ضبط کیا تھا۔ پروفیسر بیوی کا الزام ہے کہ اس کے شوہر نے وہ موبائل نہیں دیا تھا جس میں اس کے ویڈیو اور فرضی فیس بک اکاؤنٹ چل رہا تھا بلکہ جانچ کو متاثر کرنے کیلئے دوسرا موبائل دے دیا تھا۔ لہذا اس موبائل کو ضبط کیا جائے جس میں فیس بک اکاؤنٹ چل رہا تھا۔


وارانسی میں تعینات پروفیسر 19 اپریل 2019 کو شادی آگرہ میں تعینات خاتون پروفیسر سے ہوئی تھی۔ شادی کت کچھ دن بعد سے ہی دونوں میں تنازعہ شروع ہو گیا تھا۔ دونوں کے بیچ کئی بار مار پیٹ تک ہو گئی تھی۔ خاتون پروفیسر نے تنگ آکر آگرہ میں اپنے شوہر اس کے کنبے کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھا۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 27, 2021 11:12 AM IST