ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

ملک میں ایمرجنسی کے وقت ایوارڈ واپس کرنے والے کہاں تھے؟وینکیا نائیڈو کا سوال

حیدرآباد۔ ملک بھر میں جاری عدم رواداری کی فضا کے خلاف مختلف مصنفین ‘ شعراء ‘ ادیبوں اور دوسروں کی جانب سے ایوارڈ واپس کردیئے جانے کے اقدام پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر شہری ترقی ایم وینکیا نائیڈو نے ایوارڈ واپس کرنے والی شخصیتوں سے سوال کیا کہ وہ اس وقت کیا کررہے تھے جب ملک میں ایمرجنسی نافذتھی۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 07, 2015 06:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ملک میں ایمرجنسی کے وقت ایوارڈ واپس کرنے والے کہاں تھے؟وینکیا نائیڈو کا سوال
حیدرآباد۔ ملک بھر میں جاری عدم رواداری کی فضا کے خلاف مختلف مصنفین ‘ شعراء ‘ ادیبوں اور دوسروں کی جانب سے ایوارڈ واپس کردیئے جانے کے اقدام پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر شہری ترقی ایم وینکیا نائیڈو نے ایوارڈ واپس کرنے والی شخصیتوں سے سوال کیا کہ وہ اس وقت کیا کررہے تھے جب ملک میں ایمرجنسی نافذتھی۔

حیدرآباد۔  ملک بھر میں جاری عدم رواداری کی فضا کے خلاف مختلف مصنفین ‘ شعراء ‘ ادیبوں اور دوسروں کی جانب سے ایوارڈ واپس کردیئے جانے کے اقدام پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیر شہری ترقی ایم وینکیا نائیڈو نے ایوارڈ واپس کرنے والی  شخصیتوں سے سوال کیا کہ وہ اس وقت کیا کررہے تھے جب ملک میں ایمرجنسی نافذتھی۔ شہر حیدرآباد کے گچی باولی کے انڈین بزنس اسکول میں منعقد لیڈرشپ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ڈسپلن اور سیکھنے کی جدوجہد رکھنے والے افراد اپنی صلاحیتوں کو منواسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انڈین اسکول آف بزنس ریسرچ کے میدان میں نمایاں مظاہرہ کرتے ہوئے ہندوستان کا نام عالمی سطح پر کافی روشن کیاہے ۔


مرکزی وزیر نے کہاکہ امریکہ میں موجود ڈاکٹرس کی نصف تعداد ہندوستانیوں کی ہے اور ہندوستان کے کئی اہم پیشہ ور افراد دنیا کے کئی ممالک میں اہم عہدوں پر فائز ہیں۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ہندوستان سائنسی میدان میں کافی آگے بڑھ رہا ہے۔مرکزی وزیرنے کہا کہ حیدرآباد شہر کو عالمی سطح پر ترقی دینے کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔

First published: Nov 07, 2015 06:33 PM IST