ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تمل ناڈو: خاتون ایس پی نے جنسی استحصال کا الزام لگاتے ہوئے کہا " آئی جی میرے سامنے پورن دیکھتا تھا"۔

خاتون افسرنے اپنی شکایت میں کہا ہے کہ آئی جی نے اسے کئی بارگلے لگانے کی کوشش کی اورجب اس نے اس کی پہل کو خارج کردیا، تو اس نے پریشان کرنا شروع کردیا۔

  • Share this:
تمل ناڈو: خاتون ایس پی نے جنسی استحصال کا الزام لگاتے ہوئے کہا
علامتی تصویر

تمل ناڈو میں ایک خاتون ایس پی نے آئی جی رینک کے افسرکے خلاف جنسی استحصال کی شکایت درج کرائی ہے۔ ٹائمس آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق خاتون افسرنے اپنی شکایت میں کہا کہ افسرنے اسے کئی بارگلے لگانے کی کوشش کی اورجب اس نے اس کی پہل کو خارج کردیا، تو اس نے اسے پریشان کرنا شروع کردیا۔


شکایت کرنے والی خاتون افسر کا الزام ہے کہ ملزم اسے سات ماہ سے پریشان کررہا ہے۔ ملزم اسے بے وقت فون کرتا ہے اورنازیبا پیغام بھیجتا ہے۔ شکایت میں کہا گیا ہے کہ مخالفت کرنے کے باوجود بھی ملزم افسرنے اس کے سامنے پورن دیکھا تھا۔


خاتون افسر نے الزام لگایا کہ آئی جی نے اسے سالانہ رپورٹ میں غلط رپورٹ لگانے کی دھمکی دی ہے جو اس کے کیریئر کے لئے نقصاندہ ہوگا۔ خاتون افسر نے کہا کہ اس کے ٹرانسفر کی اپیل کو بار بار نظرانداز کیا جارہا ہے۔


ریاستی حکومت نے واقعہ کی جانچ کے لئے ایک داخلی کمیٹی کی تشکیل کی ہے۔ معاملہ ریاستی پولیس دفترکی حال ہی میں تشکیل کی گئی وشاکا سمیتی کو بھیجا گیا ہے۔ واقعہ کی جانچ 2013 کے ایکٹ کام کرنے کی جگہ پر خواتین کا جنسی استحصال (روک تھام، ممنوع اورروک تھام) کے مطابق کی جائے گی۔

وشاکا سمیتی کے احکامات کے مطابق اگرداخلی کمیٹی کو ابتدائی تفتیش کے دوران اس پورے معاملے میں حقائق نظرآتا ہے تو وہ پولیس محکمہ کو مجرمانہ کارروائی شروع کرنے کا مشورہ دے سکتی ہے۔
First published: Aug 20, 2018 08:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading