ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

مذہب کے نام پر یوگا کو اپنے نظریات کے پھیلاؤ کے لئے اغوا نہ کرنے دیا جائے: وجين

کیرالہ کے وزیر اعلی پنارائي وجين نے آج کہا کہ لوگوں کو اس بات کے سلسلے میں ہوشیار رہنا چاہئے کہ مذہب کے نام پر کوئی یوگا کو اپنے نظریات کے پھیلاؤ کے لئے اغوا نہ کر لے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 21, 2017 03:07 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مذہب کے نام پر یوگا کو اپنے نظریات کے پھیلاؤ کے لئے اغوا نہ کرنے دیا جائے: وجين
کیرالہ کے وزیر اعلی پنارائي وجين نے آج کہا کہ لوگوں کو اس بات کے سلسلے میں ہوشیار رہنا چاہئے کہ مذہب کے نام پر کوئی یوگا کو اپنے نظریات کے پھیلاؤ کے لئے اغوا نہ کر لے۔

ترواننت پورم۔  کیرالہ کے وزیر اعلی پنارائي وجين نے آج کہا کہ لوگوں کو اس بات کے سلسلے میں ہوشیار رہنا چاہئے کہ مذہب کے نام پر کوئی یوگا کو اپنے نظریات کے پھیلاؤ کے لئے اغوا نہ کر لے۔ مسٹر وجين نے یہاں مرکزی اسٹیڈیم میں بین الاقوامی یوم یوگا کے موقع پر منعقد پروگرام کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو یہ غلط فہمی نہیں پالنی چاہئے کہ یہ ایک مذہبی طریقہ ہے۔ انہوں نے کہا "کیرالہ کی سوچ سیکولر ہے اور یہاں ہر کوئی کشادہ ذہن کے ساتھ یوگا کر سکتا ہے۔ لیکن کوئی بھی یوگا جیسے طریقوں کے ذریعہ اشلوكوں کی ادائیگی کرکے اسے اغوا کرنے کی کوشش کر سکتا ہے اور یہ الجھن پیدا کر سکتا ہے کہ یہ کسی خاص مذہب کا حصہ ہے۔ '


انہوں نے کہا کہ اشلوكوں کی تخلیق سے پہلے یوگا کی پیدائش ہوچکی تھی۔ یوگا میں متعدد بیماریوں کو ٹھیک کرنے کی صلاحیت ہے اور اسی وجہ سے کوئی بھی یوگا کو اپنی زندگی کا حصہ بنا سکتا ہے۔ مسٹر وجين نے کہا کہ ریاستی حکومت يوگا کو اسکول کورس میں شامل کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ راج بھون میں منعقد یوگا پروگرام میں گورنر پی سداشیوم نے بھی حصہ لیا۔

First published: Jun 21, 2017 03:07 PM IST