عمران مسعود نےاکھلیش یادواورمایاوتی کو ایک اسٹیج پرآنے کے لئے کردیا مجبور

سماجوادی پارٹی کے ترجمان نے بتایا کہ دیوبند کی ریلی میں پارٹی صدراکھلیش یادوموجود رہیں گے۔ یہ پہلی بارہوگا کہ اتحاد کی تینوں پارٹیوں کے لیڈران ایک ہی منچ پرہوں گے۔

Apr 07, 2019 09:07 AM IST | Updated on: Apr 07, 2019 12:20 PM IST
عمران مسعود نےاکھلیش یادواورمایاوتی کو ایک اسٹیج پرآنے کے لئے کردیا مجبور

اکھلیش یادواورمایاوتی کی آج دیوبند میں مشترکہ ریلی ہوگی۔

آئندہ لوک سبھا الیکشن میں عظیم اتحاد کے تحت الیکشن لڑرہی سماجوادی پارٹی اوربہوجن سماج پارٹی کی پہلی مشترکہ ریلی 25 سال بعد سہارنپورکے دیوبند میں اتوارکوہونے جارہی ہے۔ تینوں پارٹیوں کےاتحاد کے بعد لوک سبھا الیکشن کے لئے یہ پہلی مشترکہ ریلی ہوگی۔ دیوبند کی یہ ریلی جامعہ طبیہ میڈیکل کالج کے پاس منعقد کی گئی ہے، جہاں پہلے مرحلے میں 11 اپریل کوالیکشن ہونے ہیں۔ ایس پی - بی ایس پی اورآرایل ڈی یہ چاہتے ہیں کہ اس بار جاٹ مسلم ساتھ ساتھ آئیں۔

کہا جارہا ہے کہ کانگریس کے امیدواراورنائب صدرعمران مسعود کی مقبولیت کی وجہ سے مایاوتی اوراکھلیش یادومشترکہ ریلی کرنے پرمجبورہوئے ہیں۔ سال 2014 کے لوک سبھا الیکشن میں مودی لہرہونے کے باوجود عمران مسعود نے چارلاکھ سے زیادہ ووٹ حاصل کئے تھے۔ حالانکہ بی جے پی کے راگھو لکھن پال سے تقریباً 66 ہزارووٹوں سے ہارگئے تھے۔ ایسے میں اس باریہاں سہ رخی مقابلہ دیکھنے کومل رہا ہے، جہاں مسلم ووٹوں کی تقسیم کا امکان زیادہ نظرآرہا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ عمران مسعود کی مقبولیت کو دیکھتے ہوئے یہ پارٹیاں مشترکہ ریلی کرنے پرمجبورہوئی ہیں۔

Loading...

سہارنپورپارلیمانی حلقے میں تقریباً 40 فیصد مسلم رائے دہندگان ہیں، جوبی جے پی سے ناراض بتائے جاتے ہیں۔ حالانکہ مسلم رائے دہندگان بھی آپس میں منقسم ہوتے نظرآرہے ہیں۔ جیسے مسلمانوں کے کئی پسماندہ طبقات اس باربی ایس پی امیدوارکے حق میں نظرآرہی ہیں۔ اس کے علاوہ یہاں جاٹوکی آبادی زیادہ ہے، جوروایتی طورپربی ایس پی کے رائے دہندگان رہے ہیں۔

سماجوادی پارٹی کے ترجمان نےبتایا کہ دیوبند کی ریلی میں پاٹی صدراکھلیش یادوموجود رہیں گے۔ یہ پہلی بارہوگا کہ اتحاد کی تینوں پارٹیوں کے لیڈرایک ہی منچ پرہوں گے۔ آرایل ڈی ترجمان انل دوبےنے بتایا کہ پارٹی صدراجیت سنگھ اورنائب صدرجینت چودھری اتوارکو دیوبند میں ریلی کوخطاب کریں گے۔ بی ایس پی، ایس پی اورآرایل ڈی کی مشترکہ ریلیوں کی شروعات اتوارسے ہورہی ہے اورآنے والے دنوں میں ایسی کئی ریلیاں ہوں گی۔

اطلاعات کے مطابق مایاوتی آج اموسی ایئرپورٹ لکھنو سےچارٹرطیارہ سے سرساواں ایئرپورٹ سہارنپورجائیں گی۔ وہاں ایئرپورٹ سے وہ ہیلی کاپٹرسے جامعہ طبیہ میڈیکل کالج دیوبند کے پاس واقع عوامی ریلی کے مقام تک پہنچیں گی اورجلسے کوخطاب کریں گی۔

سماجوادی پارٹی کے مطابق ایس پی، بی ایس پی اورآرایل ڈی کے اتحاد سے سیاست میں ایک نئی لہرپیدا ہوئی ہے۔ اکھلیش یادو کا ماننا ہے کہ نظریے پرمنحصراس اتحاد کے تئیں عوام میں بڑھتے رجحان سے بی جے پی خیمےمیں گھبراہٹ اوربوکھلاہٹ ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام حالانکہ اب بی جے پی کے بہکاوے میں آنے والے نہیں ہے۔ اسے بی جے پی کا پورا کردار معلوم ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ لوک سبھا الیکشن کا آغاز11 اپریل سے ہورہا ہے۔ پہلے مرحلے میں مغربی یوپی کی 8 لوک سبھا سیٹوں پرالیکشن ہونا ہے۔ پہلے مرحلے میں جہاں الیکشن ہونا ہے، وہ لوک سبھا حلقہ ہے۔ سہارنپور، کیرانہ، مظفرنگر، بجنور، میرٹھ، باغپت، غازی آباد اورگوتم بدھ نگرہیں۔

 

Loading...