ہوم » نیوز » وطن نامہ

زائرہ وسیم کو اگر کرنی پڑ رہی تھی جسم کی نمائش تو ان کا فیصلہ بالکل صحیح: ایس ٹی حسن

مرادآباد سے سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ ایس ٹی حسن نے زائرہ وسیم کےفیصلے پرکہا کہ اسلام ہی نہیں بلکہ دیگرمذاہب میں بھی خواتین کے جسم کی نمائش کرنا منع ہے۔ اس لئے ان کا فیصلہ بالکل صحیح ہے۔

  • Share this:
زائرہ وسیم کو اگر کرنی  پڑ رہی تھی جسم کی نمائش تو ان کا فیصلہ بالکل صحیح: ایس ٹی حسن
زائرہ وسیم نےفلم انڈسٹری چھوڑتے ہوئے اپنے فیس بک پرپوسٹ لکھ کرکہا کہ یہ مجھے میرے ایمان سے دور کررہا تھا۔

بالی ووڈ سے کنارہ کشی اختیار کرچکی یہ مشہورادا کارہ 'دنگل گرل' کے نام سے مشہور زائرہ وسیم نے فلم انڈیا سے علاحدگی اختیارکرلی ہے۔ اسی دوران سماجوادی پارٹی کے اترپردیش کے مرادآباد سے رکن پارلیمنٹ ایس ٹی حسن نے بھی بیان دیا ہے۔ ایس ٹی حسن نے زائرہ وسیم کے فیصلے کو صحیح قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگرانہیں جسم کی نمائش کرنی پڑ رہی تھی تو یہ فیصلہ صحیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ جسم کی نمائش کرنا اللہ سے دورہونا ہے اوریہ گناہ ہے۔ اگرانہوں نے اس گناہ سے بچنے کا فیصلہ لیا ہے تو یہ صحیح ہے۔


ایس ٹی حسن نے کہا 'اسلام ہی نہیں بلکہ دیگرمذاہب میں بھی خواتین کے جسم کی نمائش کرنا منع ہے۔ خاص طورپران اعضا کی نمائش کرنا، جس سے دوسرے جنس کے لوگوں کو سیکس کی اپیل ہو، وہ اسلام میں حرام ہے۔ اگرجسم کی نمائش ہورہی ہے اوراس طرح کے لباس پہنائے جارہے ہوں، جس سے سیکس اپیل ہورہی ہوتو میں سمجھتا ہوں کہ انہوں نے صحیح کیا'۔


میں اپنی اس شناخت اورکام سے خوش نہیں ہوں


واضح رہے کہ زائرہ وسیم نے 30 جون کو اپنے ٹوئٹرپر لکھا تھا 'پانچ سال پہلے میں نے جو فیصلہ لیا، اس نے میری زندگی پوری طرح بدل دی۔ میں نے بالی ووڈ میں قدم رکھا تو اس نے میرے لئے بے شمارشہرت کے دروازے کھول دیئے۔ میں عوامی توجہ حاصل کرنے لگی۔ اب جبکہ مجھے فلم انڈسٹری میں پانچ سال ہوچکے ہیں۔ میں یہ بات قبول کرنا چاہتی ہوں کہ میں اپنی اس پہچان اورکام سے خوش نہیں ہوں۔ طویل وقت سے کام کرتے ہوئے یہ احساس ہورہا ہےکہ میں کچھ اوربننے کے لئے جدوجہد کررہی ہوں'۔

میں اس فیلڈ سے خود کو الگ کررہی ہوں

انہوں نے لکھا 'اس فیلڈ میں مجھے بے حد پیار، ساتھ اورتعریف ملی، لیکن یہ مجھے گمراہی کی راہ پربھی لے جارہی تھی۔ یہ مجھے میرے ایمان سے دورکررہا ہے۔ میرے مذہب کے ساتھ میرے رشتوں کو خطرہ پہنچا رہا تھا۔ مجھے احساس ہورہا ہے کہ بھلے ہی میں یہاں پرفیکٹلی فٹ ہوتی ہوں، لیکن میں یہاں کی نہیں ہوں۔ میں آج باضابطہ اعلان کرتی ہوں کہ میں اس فیلڈ سے خود کو الگ کررہی ہوں'۔ زائرہ وسیم کے اس بیان کے بعد انہیں بالی ووڈ سے کئی طرح کے ردعمل سامنےآرہے ہیں۔ کوئی انہیں کھل کرحمایت کررہی ہے، تو کسی کا کہنا ہے کہ یہ ان کا ذاتی فیصلہ ہے۔ وہیں کئی لوگوں نےاس فیصلے پراعتراض بھی ظاہرکیا ہے۔ وہیں زائرہ وسیم نے اپنے فیصلے پرقائم نظرآرہی ہیں۔

زائرہ وسیم کے فلمی دنیا چھوڑنے کے بعد  حقیقی ہنگامہ تب شروع ہوا جب اس پوسٹ کے ایک دن بعد کئی میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا کہ زائرہ وسیم کا اکاونٹ ہیک ہوگیا تھا اور زائرہ کے بالی ووڈ چھوڑنے والا پوسٹ ہیکرنے کیا ہے۔ وہیں اب اس معاملے پرخود زائرہ وسیم وضاحت کرنے کے لئے آگے آئی ہیں اورانہوں نے پورے معاملے کو واضح کردیا ہے۔ فیس بک اکاونٹ ہیک ہونے کی خبروں کے کچھ ہی منٹوں کے بعد زائرہ وسیم نے ٹوئٹ کر کےکہا 'میں یہ واضح کرنا چاہوں گی کہ میرا کوئی بھی سوشل اکاونٹ ہیک نہیں ہوا ہے۔ ان سبھی اکاونٹس کو میں خود ہینڈل کررہی ہوں۔ برائے مہربانی ایسی کسی خبرپر یقین نہ کریں اورنہ ہی ایسی باتیں پھیلائیں۔ شکریہ'۔




واضح رہےکہ زائرہ وسیم کےبالی ووڈ سےکنارہ کشی اختیارکرلینےکے بعد مختلف طرح کی خبریں آرہی تھیں۔ ایک طرف ان کے اس فیصلے کا خیرمقدم کیا جارہا ہے تو دوسری طرف ان کےفیصلے کی تنقید بھی کی گئی۔ بالی ووڈ اداکاروں اوراداکاراوں نے بھی اس موضوع پراپنا اظہارخیال کیا۔ زائرہ وسیم کے فیصلے کا علمائے کرام نے بھی استقبال کرتے ہوئے اسے درست فیصلہ قراردیا تھا۔ جبکہ بی جے پی کے قومی ترجمان اورسینئر لیڈر شاہنوازحسین نے کہا کہ زائرہ وسیم نے یہ قدم دباومیں اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام میں ایسی کوئی پابندی نہیں ہے۔

بالی ووڈ انڈسٹری سے بھی الگ الگ رد عمل دیکھنے کومل رہا ہے۔ فلم ساز رائے کپورنے کہا کہ زائرہ ایک بہترین فنکارہیں اورہم خوش قسمت ہیں کہ انہوں نے ہماری فلم 'دی اسکائی ازپنک' میں عائشہ چودھری کا کردارادا کیا۔ وہ فلم کی شوٹنگ کےدوران پوری طرح سے پیشہ وررہیں، جواس ماہ کی شروعات میں ختم ہوئی۔ انہوں نےکہا کہ یہ پوری طرح ذاتی فیصلہ ہے، جوانہوں نے کافی غوروفکرکے بعد کیا ہے اورہم ہرطرح سے ان کی حمایت کریں گے، ابھی بھی اورہمیشہ ہی۔

وہیں سنگرابھیجیت نے زائرہ وسیم کےاس فیصلہ کوایکٹنگ بتایا ہے۔ ابھیجیت نے ایک نیوز چینل سے بات چیت کرتے ہوئےکہا کہ یہ ایکٹنگ ہےاوریہ ایکٹنگ سب سے بڑی ایکٹنگ ہے۔ جبکہ سینئراداکاررضا مراد نےاس کوزائرہ وسیم کا ذاتی فیصلہ قراردیا ہے۔ وہیں بالی ووڈ اداکارہ روینہ ٹنڈن نےٹویٹرپرلکھا کہ وہ لوگ جنہوں نےصرف دوفلموں میں کام کیا ہے، اس انڈسٹری کےتئیں اچھا محسوس نہیں کرتے ہیں کہ انہیں کیا کیا ملا ہے۔ امید کیجئے کہ وہ پرامن طریقہ سے یہاں سے نکل جائیں اوراپنےالٹے راستوں پرچلنے والی سوچ کوخود تک ہی محدود رکھیں۔


First published: Jul 01, 2019 10:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading