بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے کہا : این آر سی سے کوئی پریشانی نہیں ، وزیر اعظم مودی سے نیویارک میں ہوچکی ہے بات

شیخ حسینہ کا کہنا ہے کہ مجھے این آر سی سے کوئی پریشانی نہیں ہے ، بنگلہ دیش کو بھی اس سے فکر مند نہیں ہونا چاہئے ، کیونکہ وزیر اعظم مودی سے میری بات ہوچکی ہے ، سب ٹھیک ہے ۔

Oct 04, 2019 10:57 AM IST | Updated on: Oct 04, 2019 10:57 AM IST
بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے کہا : این آر سی سے کوئی پریشانی نہیں ، وزیر اعظم مودی سے نیویارک میں ہوچکی ہے بات

بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ ہندوستان کے دورہ پر ہیں ۔

بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ چار دن کے ہندوستان کے دورہ پر ہیں ۔ جمعرات کو وہ نئی دہلی پہنچی ہیں ۔ ہندوستان آنے کے بعد شیخ حسینہ نے کہا کہ آسام میں نیشنل سٹیزن رجسٹر ( این آر سی ) سے بنگلہ دیش کو کوئی پریشانی نہیں ہے ، اس سلسلہ میں نیویارک میں اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس کے موقع پر وزیر اعظم مودی سے پہلے ہی گفتگو ہوچکی ہے ۔ بتادیں کہ ہندوستانی حکومت این آر سی کے ذریعہ دراندازوں کی شناخت کررہی ہے ، جس میں بڑی تعداد میں بنگلہ دیش سے آئے لوگ شامل ہیں ۔

انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق جب شیخ حسینہ سے پوچھا گیا کہ کیا وہ وزیر اعظم مودی کی یقین دہانی سے مطمئن ہیں تو انہوں نے کہا کہ یقینا ، مجھے این آر سی سے کوئی پریشانی نہیں ہے ، بنگلہ دیش کو بھی اس سے فکر مند نہیں ہونا چاہئے ، کیونکہ وزیر اعظم مودی سے میری بات ہوچکی ہے ، سب ٹھیک ہے ۔ بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ ورلڈ اکنامک فورم کی انڈیا اکنامک سمٹ میں شرکت کیلئے ہندوستان آئی ہیں ۔ وہ وزیر اعظم مودی کے ساتھ ہفتہ کو باہمی بات چیت کریں گی ۔

Loading...

دراصل گزشتہ ہفتہ وزیر اعظم مودی یو این جی اے کے اجلاس میں شرکت کیلئے نیویارک گئے تھے اور اس دوران ان کی بنگلہ دیش کے وزیر اعظم شیخ حسینہ سے بھی ملاقات ہوئی تھی ۔ اس وقت شیخ حسینہ نے این آر سی کا معاملہ اٹھایا تھا اور تشویش ظاہر کی تھی ، جس پر وزیر اعظم مودی نے انہیں یقین دہانی کرائی تھی کہ ہندوستان – بنگلہ دیش کے درمیان اچھے تعلقات ہیں ، ایسے میں بنگلہ دیش کو این آر سی سے فکرمند ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔

قابل ذکر ہے کہ آسام کی این آر سی فہرست میں نام شامل کروانے کیلئے 3 کروڑ 30 لاکھ 27 ہزار 661 لوگوں نے درخواستیں جمع کی تھیں ۔ ستمبر میں جاری این آر سی کی حتمی فہرست میں 33027611 درخواست دہندگان میں سے 1906657 درخواست دہندگان کو باہر کردیا گیا جبکہ 31122004 درخواست دہندگان کو فہرست میں شامل کیا گیا ہے ۔

Loading...